The news is by your side.

Advertisement

ترک صدر کا وزیراعظم کو فون، اسرائیلی جارحیت کی مذمت

ترک صدر رجب طیب اردوان نے وزیراعظم عمران خان سے ٹیلیفونک رابطہ کر کے فلسطین پر ‏اسرائیلی جارحیت و بربریت پر گفتگو کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو ترک صدررجب طیب اردوان نے ٹیلی فون کیا جس ‏میں اسرائیلی بربریت اور جارحیت پر دونوں رہنماؤں نےتبادلہ خیال کیا۔

دونوں رہنماؤں نےاسرائیلی جارحیت و بربریت کی مذمت کی اور اتفاق کیا کہ مسلم ممالک کو مل ‏کر اسرائیل کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف آواز اٹھانی چاہیے۔

رہنماؤں نے اس نکتے پر بھی اتفاق کیا کہ دونوں ممالک کے وزرائےخارجہ فلسطین کے مسئلےکو ‏عالمی سطح پر اٹھائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مسئلہ فلسطین کیلئے ترکی کےکردار کو سراہتےہیں جب کہ افغان امن عمل، فوجوں کےانخلاپرترکی کی کوششوں کےمعترف ہیں۔

ٹیلی فونک گفتگو میں پاک ترک دوطرفہ تعلقات کوفروغ دینے پر اتفاق کیا گیا اور دونوں رہنماؤں نےایک دوسرےکوعیدکی مبارک بادبھی دی۔

اس سے قبل زیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر فلسطین سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے نامور دانشور نام چومسکی کی پوسٹ شیئر کی اور اپنے پیغام میں کہا میں پاکستان کا وزیراعظم ہوں اورفلسطین کیساتھ کھڑا ہوں۔

وزیراعظم عمران خان نے اسٹینڈ ود غزہ اور اسٹینڈ ود فلسطین کا ہیش ٹیگ شیئر کیا۔

دوسری جانب انسانی حقوق کی وزیر شیریں مزاری نے اپنے پیغام میں کہا کہ فلسطینیوں کے خلاف ریاستی دہشت گردی بلا روک ٹوک جاری ہے ، فلسطینیوں کو القدس میں نماز ادا کرنے سے روک دیا گیا ، غزہ میں بچوں سمیت فلسطینیوں کوقتل کیا گیا، اقوام متحدہ کو فلسطینیوں کے قتل پر محض تشویش ہے۔

شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ اوردنیامحض تشویش کےاظہارپراکتفانہیں کرسکتے، اوآئی سی کوبھی فلسطین اورکشمیرپرروایتی اندازسےہٹ کرآگےبڑھناہوگا۔
یاد رہے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے فلسطین کیساتھ مکمل یکجہتی کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا پاکستان کا مؤقف مسئلہ فلسطین اور مسجد اقصیٰ پر واضح ہے ، نہتے نمازیوں پر فائرنگ قابل افسوس ہے، عالمی برادری اسرائیلی تشدد بند کرانے کیلئے اقدامات کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں