The news is by your side.

Advertisement

ترک صدر نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مسئلہ کشمیر ایک بار پھر اٹھا دیا

نیویارک: ترک صدر رجب طیب اردوان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مسئلہ کشمیر ایک مرتبہ پھر اٹھاتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجیب طیب اردوان کا کہنا تھا کہ جنوبی ایشیا میں امن کے لیے مسئلہ کشمیر کو حل ہونا چاہئے۔

ترک صدر نے کہا یہ تنازع اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئے، کیونکہ جنوبی ایشیا میں امن کا انحصار مسئلہ کشمیر پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں امن اور انسانیت کے لیے آواز اٹھاتے رہیں گے اور اپنے موقف سے دستبردار نہیں ہوں گے، یونان کے مسئلے پر مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔

رجب طیب اردوان نے کہا کہ شام میں ہزاروں بہن بھائیوں کو اپنے ملک میں بسایا، لیبیا، شام، یمن سمیت جنگ زدہ علاقوں میں امن کے لیے اقوام متحدہ کردار ادا کرے۔

ترک صدر نے کہا کہ اسرائیل سے تنازع کا حل فلسطینی خود مختار ریاست کے قیام کی صورت میں ہوگا، تنازع کا حل فلسطینی ریاست کی 1967 کی سرحد کے قیام کی صورت میں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ بیشتر ممالک کو لاحق خطرات کے خاتمے کے منتظر ہیں، متعدد دہشت گرد تنظیموں سے مدمقابل ہیں جبکہ یواین قراردادوں پر عمل سے شام بحران کا حل ترجیح ہونی چاہئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں