site
stats
عالمی خبریں

امریکہ میں مسلمان نوجوان کو دوست سمیت قتل کردیا گیا

نیویارک : امریکی ریاست میری لینڈ میں ایک مسلمان نوجوان کو اس کے دوست سمیت بے رحمی سے قتل کر دیا گیاہے، پولیس نے قاتلوں کی نشاندہی میں مدد کرنے والے کیلئے بیس ہزا ڈالر کے انعام کا بھی اعلان کیا ہے۔

میری لینڈ میں نارتھ ویسٹ ہائی اسکول کی گریجویشن تقریب سے صرف ایک روز قبل سترہ سالہ ہونہار مسلمان طالب علم شادی نجر کو اس کے دوست اٹھارہ سالہ آرتیم زیبروف کے ہمراہ بے دردی سے قتل کر دیا گیا۔

دونوں دوست اپنے ہائی سکول کے ہونہار اور قابل ترین طالب علموں میں شمار کئے جاتے تھے جبکہ شادی نجر اپنے علاقے کی مسجد میں مسلمانوں کی تمام تر تقریبات اور مذہبی رسومات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتا تھا ۔

پولیس ابتدائی تحقیقات کے مطابق دونوں دوستوں کا کسی سے کوئی جھگڑا نہیں تھا تاہم قاتلوں نے دونوں نوجوانوں کو گاڑی میں بیٹھے ہوئے ہی بائیس گولیاں ماریں، ابھی تک پولیس نے اس واقعہ کو نفرت پر مبنی واقعہ قرار نہیں دیا تاہم قاتلوں کی نشاندہی پر بیس ہزار ڈالرز کی انعامی رقم کا اعلان کیا ہے۔

پولیس کو علاقے کو لوگوں نے تب فون کیا جب انہیں بیس سے زائد راؤنڈز فائر کرنے کی آوازیں آئیں، پولیس موقع پر پہنچی تو دو جوان لڑکوں ان کی گاڑی میں ہی قتل کر دیا گیا تھا جبکہ گاڑی بھی سٹارٹ ہی کھڑی تھی۔

واقعہ میں جرمن ٹاؤن کی مسلم کمیونٹی نے بھی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top