The news is by your side.

Advertisement

بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ، پاک فوج کے 2 جوان شہید

لاہور: پاکستان کی جانب سے امن کے پیغام کے بعد بھی بھارت نے جنگی جنون کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایل اوسی پرفائرنگ وگولہ باری کی، جس کے نتیجے میں پاک فوج کے 2 جوان سمیت دو پاکستانی شہری شہید ہوگئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر نکیال سیکٹرپرشہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ کی گئی ، بلااشتعال فائرنگ میں پاک فوج کے2جوان شہید ہوگئے، شہدا میں حوالدارعبدالرب اورنائیک خرم شامل ہیں۔

پاک فوج کے شہید جوانوں حوالدار عبدالرب اور نائیک خرم کی نماز جنازہ میر پور آزاد کشمیر میں ادا کی گئی، نمازِ جنازہ میں فوج سینئر افسران اور عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

پاک فوج کی جوابی کارروائی میں بھارتی مورچوں کو نقصان اور بھاری جانی نقصان کی اطلاع ہے۔

اس سے قبل بھارتی فوج کی جانب سے ایل اوسی کی تتہ پانی ، جنڈرت اور گرم چشمہ سیکٹرمیں شہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ کی گئی ، جس کے نتیجے میں 2 پاکستانی شہری شہید اور 2 زخمی ہوگئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کی بھرپور جوابی کارروائی کے بعد بھارتی توپیں خاموش ہوگئیں،پاک فوج نے شہریوں کو نشانہ بنانے والے بھارتی پوسٹوں کو نشانہ بنایا۔

ترجمان کا کہنا ہے پاک فضائیہ اور پاک نیوی ہوشیار اور مستعدہے۔

گذشتہ روز جس وقت گرفتار بھارتی پائلٹ کو واہگہ پر بھارتی حکومت کے حوالے کیا گیا، عین اسی وقت بھارتی فوج نے اپنی سطحی سوچ کا مظاہرہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول کے تین مقامات پر شہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی تھی۔

بھارتی فوج کی جانب سے بلا اشتعال گولہ باری سے ایک پاکستانی شہری شہید جبکہ دو افراد زخمی ہوگئے تھے، اس کے علاوہ کھوئی رٹہ سیکٹر، سماہنی سیکٹر، راولاکوٹ میں تتہ پانی اوردرہ شیخان پر گولہ باری کی، جس سے مزید تین افراد زخمی ہوئے تھے۔

مزید پڑھیں : ابھی نندن کی حوالگی کے فوری بعد بھارتی فوج کی ایل او سی پر فائرنگ، ایک شہری شہید

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے صاف الفاظ میں دنیا پر واضح کر دیا تھا  کہ  پاکستان اپنے دفاع میں کارروائی کا حق محفوظ رکھتا ہے، کسی بھی جارحیت کا بھرپور جواب دیں گے۔

یاد رہے 27 فروری کو پاک فضائیہ نے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کرنے والے 2 بھارتی طیارے مار گرائے تھے اور ایک بھارتی پائلٹ کو گرفتار کرلیا تھا، آئی ایس پی آر کے سربراہ میر جنرل آصف غفور کے مطابق بھارت کے 2 طیارے لائن آف کنٹرول کے اطراف میں گر کر تباہ ہوئے، ایک طیارہ بھارتی مقبوضہ کشمیر کے علاقے بڈگام میں گرا، جبکہ دوسرا طیارہ پاکستان کی جانب گرا تھا۔

بعد ازاں پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کی جانب سے بیان میں کہا گیا تھا کہ بھارتی جارحیت کا جواب دینے کے لیے لائن آف کنٹرول پر پاک فوج کے جوان الرٹ ہیں، پاکستان ایئر فورس اور نیوی بھی پوری طرح الرٹ ہے۔

خیال رہے پاکستان کی جانب سے گرفتار بھارتی پائلٹ کو بھارت کے حوالے کیا جا چکا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں