The news is by your side.

Advertisement

امریکا: بچوں کو بچاتے ہوئے دو سعودی نوجوانوں نے اپنی زندگی قربان کر دی

بوسٹن: امریکی ریاست میسا چوسٹس میں دریائے چکوپی میں ڈوبنے والے دو مقامی بچوں کو بچاتے ہوئے دو سعودی طلبہ نے اپنی زندگی قربان کردی۔

تفصیلات کے مطابق یہ واقعہ گزشتہ جمعے کو پیش آیا تھا، عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ ریڈ برج روڈ کے قریب دریا میں دو امریکی لڑکے تیز لہروں میں بے بس ہوگئے تھے۔

لڑکوں کو بچانے کے لیے وہاں موجود لوگ کوششیں کر رہے تھے لیکن اس دوران دو سعودی طلبہ خود بھی تیز لہروں کی زد میں آکر بہہ گئے۔

مقامی حکام کا کہنا ہے کہ ڈوب کر جان قربان کرنے والے سعودی نوجوانوں کی شناخت ستائیس سالہ ذیب الیامی اور پچیس سالہ جاسر آل راکہ کے نام سے ہوئی ہے، جن میں ایک کی لاش جمعے کی رات ہی مل گئی تھی تاہم دوسرے کی لاش پیر کو ملی۔

آج امریکا کا 242 واں یوم آزادی منایا جارہا ہے


معلوم ہوا ہے کہ دونوں نوجوان کزن ہیں، اور ان کا تعلق سعودی عرب کے جنوبی صوبے نجران سے ہے، دونوں گزشتہ پانچ برسوں سے اسکالر شپ پر سول انجینئرنگ کی تعلیم حاصل کر رہے تھے۔

جاں بحق سعودی نوجوانوں کے ایک اور کزن نے میڈیا کو بتایا کہ جاسر اور ذیب آئندہ دو ہفتوں میں فارغ التحصیل ہونے والے تھے، جب کہ تین برس بعد گھر کو جانے والے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں