The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں خام تیل کی فی بیرل قیمت 2 ڈالرسے بھی کم ہوگئی

واشنگٹن: عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں کم ترین سطح پر آگئیں جس کے بعد امریکا میں خام تیل کی مارکیٹ کریش کرگئی۔

تفصیلات کے مطابق امریکا میں خام تیل کی مارکیٹ کریش کرگئی جس کے بعد خام تیل کی فی بیرل قیمت 2 ڈالر سے بھی کم ہوگئی، خام تیل کی قیمت میں 91 فیصد تاریخی کمی ہوئی۔

ڈبلیو ٹی آئی خام تیل کی قیمت تاریخ میں پہلی بار منفی میں چلی گئی، ڈبلیو ٹی آئی خام تیل کی قیمت 0.01 ڈالر کی سطح پر پہنچ گئی۔

دوسری جانب کینیڈا میں تیل کی قیمت منفی میں چلی گئی جس کے بعد آئل کمپنیوں نے حکومت سے مدد مانگ لی، پیر کے روز ویسٹرن کینیڈین آئل کے ایک بیرل کی قیمت منفی صفر اعشاریہ 15 ڈالر تک گر گئی۔

امریکی معیشت کو تیل کی قیمتیں گرنے سے فرق نہیں پڑے گا، ماہر معاشیات مزمل اسلم

ماہر معاشیات مزمل اسلم نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکی معیشت کو تیل کی قیمتیں گرنے سے فرق نہیں پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ تیل کی قیمتوں سے لگ رہا ہے 85 فیصد دنیا گھروں پر ہے، دنیا میں اس وقت تیل کی ترسیل اور اسٹوریج مہنگی ہوئی ہے، اس وقت تیل پیدا کرنے والے فری میں تیل دینے کو تیار ہیں۔

ماہر معاشیات نے کہا کہ آج قیمتیں اس حد تک گری ہیں کل قیمت پھر زیادہ ہوں گی، پاکستان نے ایک ماہ سے تیل درآمد نہیں کیا، پاکستان میں اس وقت تیل کا استعمال بہت ہی کم ہے، پاکستان اگر آج تیل خرید لیتا ہے تو بہت اچھی بات ہوگی، آج تیل خرید لیا جائے اور آئندہ 10 دن تک درآمد بھی کرلیا جائے تو اچھا ہوگا۔

مزمل اسلم کے مطابق سب سے بڑی چیز تیل کی اسٹوریج ہے، تیل کی ترسیل بھی بہت اہم ہوتی ہے، تیل کی قیمتیں گرنے سے سب سے زیادہ نقصان عرب ممالک کو ہوگا، عرب ممالک کی کمائی زیادہ تر تیل سے ہوتی ہے، ایک سال تک ایسی صورتحال رہی تو عرب ممالک کو بہت نقصان ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں