The news is by your side.

Advertisement

امارات کے مرکزی بینک نے ادائیگی نظام کے 2 نئے قواعد کا اجرا کردیا

ابو ظہبی: متحدہ عرب امارات کے مرکزی بینک نے ملک میں جاری ادائیگیوں کے نظام اور ملک سے باہر درہم میں کلیئرنگ اور سیٹلمنٹ کی ادائیگیوں کے نظام کے لیے 2 نئے قواعد کا اجرا کردیا۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق لارج ویلیو پیمنٹ سسٹمز، ایل وی پی ایس کی ریگولیشن اور ریٹیل پیمنٹ سسٹمز، آر پی ایس کے قواعد جاری کیے گئے ہیں جس کا مقصد مؤثر ترین مالیاتی ڈھانچے کو فروغ دینا ہے جو مالیاتی استحکام اور تحفظ صارفین کے لیے ضروری ہے۔

ایل وی پی ایس ریگولیشن سے مالیاتی ڈھانچے کے نظام کے معیار کا تعین ہوتا ہے جو ملک میں تھوک ادائیگیوں کی سرگرمیوں کے لیے معاون ہوگا۔

آر پی ایس ریگولیشن میں پرچون ادائیگیوں پر توجہ مرکوز رکھی گئی ہے جو پرچون سرگرمیوں سے متعلق فنڈز ٹرانسفر، کلیئرنگ اور سیٹلمنٹ سروسز کی ہیں۔ اس ریگولیشن میں بغیر کسی کرنسی یا تبادلہ امتیاز کے تمام ریٹیل ادائیگیوں کو کور کیا گیا ہے۔

ملک میں کام کرنے والے ایل وی پی ایس او آر پیس ایس کے سسٹم آپریٹرز اور سیٹلمنٹ اداروں کو کہا گیا ہے کہ وہ فروری 2022 کے اواخر تک والے عبوری عرصہ میں ان دونوں قواعد کے تقاضوں کو پورا کرلیں۔

مرکزی بینک کے گورنر عبدالحمید ایم سعید الاحمدی کا کہنا ہے کہ ادائیگیوں کا نظام، مالیاتی نظام کا اہم عنصر ہوتا ہے جو کسی بھی ملک کے مالیاتی ڈھانچے کا اہم ترین حصہ ہوتا ہے۔

ان دونوں قواعد کا اجرا مؤثر ترین اور قابل آسان رسائی والے مالیاتی نظام کے قیام میں ایک اہم سنگ میل ہے، یہ صورتحال ملک کے مالیاتی اداروں، کارپوریشنز اور لوگوں کی خدمت کے ساتھ ملک کی مسابقتی معیشت کے لیے بھی معاون ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں