The news is by your side.

Advertisement

عرب شہری نے گرل فرینڈ‌ کو کیوں قتل کیا؟

ابوظبی : عرب شہری نے ساتھی ملازم سے تعلقات رکھنے پر گرل فرینڈ کو قتل کرکے خود کو پولیس کے حوالے کردیا۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی ریاست عجمان میں مقیم 28 سالہ عرب جوان نے اپنی گرل فرینڈ کو بے وفائی کی خوفناک سزا اس وقت دی جب ساتھی ملازم کے ساتھ اس کے تعلقات عیاں ہوئے۔

اماراتی میڈیا کا کہنا تھا کہ ملزم کو بھی قتل کرنے کی کوشش کی تھی تاہم وہ خوش قسمتی سے زندہ بچ گیا۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ ملزم نے واردات کے بعد خود کو پولیس کے حوالے کرکے قتل کا اعتراف کرلیا۔

عرب ملزم نے پولیس کو بتایا کہ اس کے گزشتہ تین برس سے ایک عرب لڑکی کے ساتھ تعلقات ہیں لیکن گزشتہ ایک سال سے گرل فرینڈ کا رویہ کچھ تبدیل سا تھا اور بہت کہانیاں بنارہی ہے۔

ملزم نے بیان دیا کہ مقتولہ میرے ساتھی ملازم 43 سالہ عرب شہری کے ساتھ بھی تعلق رکھتی تھی، جس کے باعث میں نے ساتھی ملازم کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔

ملزم نے بتایا کہ میں ساتھی ملازم کو موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد گرل فرینڈ کی جانب گیا جو الراشدیہ میں مقیم تھی تاکہ قتل کرسکوں۔

عجمان پولیس کے سی ٹی ڈی ڈپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر لیفٹیننٹ کرنل احمد سعید النعومی کا کہنا تھا کہ قاتل و مقتول دونوں ایک نجی سیکیورٹی کمپنی میں سیکیورٹی گارڈ کی نوکری کرتے تھے۔

لیفٹیننٹ کنرل احمد سعید نے بتایا کہ وہ عرب جوان پولیس آیا تو اس کے ہاتھ خون سے بھرے ہوئے تھے اور نوجوان نے پولیس اہلکار سے کہا کہ اس نے اپنی گرل فرینڈ اور ساتھی ملازم کو قتل کردیا ہے۔

ملزم کا بیان سننے کے بعد پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی تو پارکنگ گراؤنڈ میں 43 سالہ عرب شہری زخمی حالت میں پڑا تھا جسے سر پر زخم آئے تھے، پولیس نے آلہ قتل برآمد کرکے زخمی کو اسپتال منتقل کردیا۔

پولیس نے میڈیا کو بتایا کہ ملزم نے ساتھی ملازم عجمان کے علاقے الںخیل میں جبکہ گرل فرینڈ کو الراشدیہ میں واقع فلیٹ میں قتل کیا تھا۔

اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ پولیس نے کیس پبلک پراسیکیوٹر کو منتقل کردیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں