The news is by your side.

Advertisement

ابوظہبی، حکومت نے ویزہ پالیسی میں نرمی کردی

حکومت نے بیوہ، طلاق یافتہ خواتین اور طالب علموں کو خصوصی رعایت دی

ابوظہبی: متحدہ عرب امارات کی حکومت نے طلاق یافتہ اور بیوہ خواتین سمیت طالب علموں کے لیے نئی ویزہ پالیسی کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی حکومت نے اپنے ملک میں سیاحت کو بڑھانے کے لیے نئی ویزہ پالیسی متعارف کروائی جس کے تحت بیوہ اور طلاق یافتہ خواتین اپنے بچوں کے ساتھ بغیر اسپانسر ابوظہبی کا ویزہ حاصل کرسکیں گی۔

حکومتی ترجمان نے بدھ کے روز ویزہ پالیسی میں نرمی کے حوالے سے اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ ’وہ غیرملکی خواتین جن کو بیوہ یا شوہر سے علیحدہ ہوئے ایک سال سے کم عرصہ ہوا وہ جلد ویزہ حاصل کرسکیں گی‘۔

حکومت نے اعلان کیا کہ غیر ملکی سیاحوں کو ویزے کی معیاد بڑھانے کے لیے ابوظہبی چھوڑنے کی ضرورت نہیں بلکہ وہ یہیں رہتے ہوئے  ویزہ میں ایک سال تک کی توسیع کرواسکتے ہیں۔

مزید پڑھیں: جاپانی حکومت کا غیر ملکی مزدوروں کی ویزہ پالیسی میں نرمی کا فیصلہ

غیر ملکی امور دیکھنے والے حکومتی ترجمان بریگیڈیئر سعید رکھن الرشیدی کا کہنا تھا کہ وہ غیر ملکی طالب علم جن کی عمریں 18 سال سے زائد ہیں اُن کے بھی ویزہ کی معیاد میں ایک سال کی توسیع کردی جائے گی۔

اُن کا کہناتھا کہ اس سے قبل حکومت نے یہ شرط عائد کررکھی تھی کہ جب تک خواتین کو اُن کے خاوند اسپانسر نہ کریں وہ ابوظہبی نہیں آسکتی تھیں البتہ اب انہیں اس کی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ انہیں اور بچوں کو مکمل سہولیات دی جائیں گی۔

بیوہ یا طلاق یافتہ خواتین کو ویزہ حاصل کرنے کے لیے درخواست کے ساتھ طلاق نامہ / ڈیتھ سرٹیفیکٹ، میڈیکل فٹنس اور بچوں کے تمام کوائف فراہم کرنے ہوں گے، ایک سال کی فیس 100 درہم مقرر کی گئی ہے۔

الرشیدی کا کہنا تھا کہ ’وہ طالب علم جو گریجویشن کے لیے ابوظہبی کی جامعات میں داخلہ لیں گے اُن کے لیے 18 سال عمر کی شرط اور والدین کی جانب سے اسپانسر ضروری ہے‘۔

یہ بھی پڑھیں: دبئی میں سیاحت کے لیے نئی ویزہ پالیسی متعارف

طالب علموں کی ویزہ فیس بھی 100 درہم ہوگی اور انہیں ماضی کی طرح بینک اکاؤنٹ میں کوئی سیکیورٹی رقم جمع کرانے کی ضرورت نہیں البتہ یونیورسٹی کے کاغذات اور تعلیمی اسناد کی شرط ضروری ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ ہر قسم کے ویزہ کی معیاد ایک مہینے کے لیے آسانی کے ساتھ بڑھا دی جائے گی جس کی فیس 600 درہم مقرر کی گئی ہے۔

الرشیدی کا مزید کہنا تھا کہ حکومت نے ویزہ پالیسی میں نرمی کا قانون سیاحت کو فروغ دینے کے لیے کیا تاکہ غیر ملکی مزدور ابوظہبی آکر ملازمت اختیار کرسکیں اس کے ذریعے ملک کی معیشت کو مضبوط کیا جاسکتا ہے۔ نئی ویزہ پالیسی کا اطلاق 21 اکتوبر سے ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں