The news is by your side.

Advertisement

سوڈان میں معاشی بحران، ابوظہبی حکام کی طرف سے سینکڑوں ملین ڈالر کی امداد

ابوظہبی: متحدہ عرب امارات نے سوڈان کو معاشی بحران سے نکلنے میں مدد کے لیے ملکی مرکزی بینک میں ڈھائی سو ملین ڈالر جمع کرانے کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اس اقدام کا مقصد سوڈان میں عمر البشیر کے اقتدار کے خاتمے کے بعد اس افریقی ملک کی مالی امداد کرنا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ ان رقوم کی منتقلی کے لیے سوڈانی مرکزی بینک اور ابوظہبی کے ترقیاتی فنڈ کے مابین ایک سمجھوتے پر دستخط پہلے ہی کیے جا چکے تھے۔

پچھلے ہفتے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے سوڈان کے لیے مجموعی طور پر تین بلین ڈالر کے قرضوں کا اعلان کیا تھا۔

سوڈان کے مرکزی بینک نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ سعودی اور اماراتی امداد سے قبل سوڈانی پاﺅنڈ کی ایک امریکی ڈالر کے مقابلے میں قیمت 47 اعشاریہ 5 ڈالر تھی جو امداد کے بعد بڑھ کر 45 ڈالر ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے مشترکہ طور پر سوڈان کو تین ارب ڈالر کی امداد فراہم کی تھی۔ اس میں سے 50 کروڑ ڈالر مرکزی بنک میں کرنسی کے استحکام کے لیے 50 کروڑ ڈالر کی رقم ڈیپازٹ کی گئی تھی۔

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے سوڈان میں فوجی عبوری حکومت کی حمایت کا اظہار کرچکے ہیں، البتہ فوجی حکومت جلد انتخابات کے ذریعے اقتدار سولین تک منتقل کرنے کے خواہاں ہیں۔

سوڈان میں سیاسی ومعاشی بحران، سعودی عرب اور یو اے ای کا امداد کا اعلان

دوسری جانب سوڈان کی عبوری فوجی حکومت نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ وہ اقتدار جلد ہی سویلین حکومت کے حوالے کر دے گی، ساتھ ہی یہ تصدیق بھی کر دی گئی ہے کہ معزول صدر عمر البشیر کو جیل منتقل کر دیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں