ڈھاکہ میں اوبر ٹیکسی سروس غیرقانونی قرار -
The news is by your side.

Advertisement

ڈھاکہ میں اوبر ٹیکسی سروس غیرقانونی قرار

ڈھاکہ : بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ اوبر ٹیکسی سروس کو غیرقانونی قرار دے دیا۔

بنگلہ دیش روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی نے اوبر ٹیکسی سروس کے آغاز کے دو روز بعد ہی اس کو غیرقانونی قرار دے دیا، ٹرانسپورٹ اتھارٹی کی جانب سے نوٹس جاری کیا گیا ، جس میں ڈرائیورز کو ہدایت دی گئی ہے کہ مشہور فون ایپلی کیشن کے ذریعے کام نہ کریں۔

btr

نوٹس میں اوبر کے مالک اور ڈرائیوز کو بھی خبردار کیا گیا ہے۔

مشہور کار سروس نے 2010 میں اپنی لانچ کے بعد سے دنیا بھر میں سفری سہولیات کو بہتر بنانے اور تبدیلی لانے میں اہم کردار ادا کیا ہے، تاہم کئی بار ممالک کے قوانین و ضوابط کی پابندیوں کی وجہ سے تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

btr1

بی آر ٹی اے کے ڈائریکٹر محمد نورالاسلام کا کہنا ہے کہ ہم اس طرح کے اقدامات کا خیر مقدم، لیکن کسی نے بھی حکام سے اجازت نہیں لے، آن لائن ٹیکسی سروس غیرقانونی طور پر کام کررہی ہے۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ اوبر چاہے تو بنگلہ دیش میں موجود دو ٹیکسی سروسز کے ساتھ مل کر کام کرسکتی ہیں لیکن اس ایپلی کیشن کو دیگر نجی گاڑیوں اور کاروں کے ساتھ استعمال نہیں کیا جاسکتا۔

واضح رہے کہ کار رائیڈ سروس اوبر نے 22 نومبر کو بنگلہ دیشی دارالحکومت ڈھاکا میں ٹریفک کے دباؤ کو کم کرنے کے لیے اپنی سروسز کا آغاز کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں