The news is by your side.

Advertisement

برطانوی ویزے کا حصول، خواہش مند افراد کیلئے بڑی خبر

لندن : برطانوی وزیرداخلہ پریتی پٹیل نے پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرا دیا، جس کے تحت یکم جنوری کے بعد ویزا حصول کے لیے 70 پوائنٹس پورے کرنا ہوں گے جبکہ طلبہ تعلیم کی تکمیل کے بعد 2سال کا ورک ویزا حاصل کر سکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی وزیرداخلہ پریتی پٹیل نے پوائنٹس بیسڈ سسٹم متعارف کرا دیا، جس کے تحت یکم جنوری کے بعد خواہشمند پوائنٹ پورے کرکےبرطانیہ منتقل ہو سکیں گے۔

برطانوی وزیرداخلہ کا کہنا ہے کہ ویزا حصول کے لیے 70 پوائنٹس پورے کرنا ہوں گے، میڈیکل اور سوشل کیئرورکرز کو ترجیح دی جائے گی، میڈیکل ورکر فاسٹ ٹریک سسٹم بھی استعمال کر سکیں گے۔

وزیرداخلہ نے مزید کہا یورپی شہری بھی پوائنٹس بیسڈ سسٹم سےمستفید ہو سکیں گے، ایک سال سےزیادہ جیل کی سزاملنےوالوں کوڈی پورٹ کیا جائے گا جبکہ طلبہ تعلیم کی تکمیل کے بعد 2سال کا ورک ویزا حاصل کر سکیں گے۔

مزید پڑھیں : برطانیہ کی نئی ویزا پالیسی، ہنر مند افراد کے لیے اہم فیصلہ

یاد رہے رواں سال فروری میں بریگزٹ کے بعد برطانیہ میں امیگریشن کیلئے نئے پوائنٹس بیسڈ سسٹم کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ اب ویزوں کے لیے دنیا بھر سے ہنرمند افراد کو ترجیح دی جائے گی۔

اس نئے سسٹم کا اطلاق یکم جنوری 2021 سے ہوگا اور اس سے دنیا کی باصلاحیت ورک فورس کیلئے برطانیہ کے دروازے کھل جائیں گے، نئے ’پوائنٹس بیسڈ سسٹم‘ میں اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ برطانیہ آنے کے لیے ویزا ان افراد کو ملے جن کے پاس برطانوی معیشت کو درکار مہارت ہو

برطانوی محکمہ داخلہ نے کہا تھا کہ کم سے کم تنخواہ کے مشورے پر عمل درآمد کیا جائے گا۔ خیال رہے کہ مائیگریشن ایڈوائزری کمیٹی ( ایم اے سی) نے ہنر مند تارکین وطن کی کم سے کم تنخواہ 30 ہزار پاؤنڈز سے کم کر کے 26 ہزار 600 پاؤنڈز کرنے کا مشورہ دیا تھا۔

کہا جا رہا ہے کہ نئی برطانوی پالیسی میں ٹیکنالوجی پر سرمایہ کاری اور آٹومیشن پر توجہ مرکوز کی گئی ، کیونکہ برطانیہ چاہتا ہے کہ تارکین وطن کی تعداد کو زیادہ سے زیادہ کم کیا جائے، اس لیے برطانوی ویزے کے حصول کے لیے مقرر کردہ معیار کی شرط برقرار رکھی گئی ہے، جس میں انگریزی بولنے کی صلاحیت اور آفر لیٹر شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں