برطانوی نژاد پاکستانی نوجوان کو انقلابی ایجاد نے کروڑ پتی بنادیا -
The news is by your side.

Advertisement

برطانوی نژاد پاکستانی نوجوان کو انقلابی ایجاد نے کروڑ پتی بنادیا

برطانیہ: برطانوی نژاد پاکستانی نوجوان نے اپنی سادہ اور حیرت انگیز ایجاد سے سب کو حیران کردیا ہے ، جس کی بدولت اب تک 13 کروڑ روپے (10 لاکھ برطانوی پونڈ) کی رقم بطور سرمایہ جمع کرچکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی نژاد پاکستانی طالبعلم نے کمال کردکھایا ، 21سالہ یاسر خٹک نے اسکول کے دور میں ایک سادہ سوئچ اور ساکٹ بنایا تھا، جسے اسمارٹ فون ایپ کے ذریعے کھولا اور بند کیا جاسکتا ہے، اس کے علاوہ ان کی ایپ استعمال ہونے والی بجلی کی مقدار اور حفاظتی اقدامات سے بھی ہاتھوں ہاتھ آگاہ کرتی ہے۔

boye

موبائل کا بطور ریموٹ کنٹرول استعمال

یاسر نے اس کا عملی مظاہرہ اسکول کے ایک پروجیکٹ میں کیا تھا، موبائل کو ریموٹ کنٹرول کے طور پر استعمال کرکے گھریلو روشنیاں اور برقی آلات کھولے اور بند کیے جاسکتے ہیں، اس ایپ کے لیے پہلے سے استعمال ہونے والے سوئچ کو دور سے آن آف کرنے کے قابل بنایا جاسکتا ہے۔

ریموٹ کنٹرول سوئچ تقریبا 20 میٹر کے دائرہ کار کے اندر اندر کام کرتا ہے جبکہ ایپ وائی فائی حب کے ذریعے منسلک ہوتا ہے، جو اس کے بعد سوئچ کو حکم دیتا ہے۔

boy-2

یاسر کے مطابق اس سسٹم سے بچے، بوڑھے اور دیگر ایسے افراد بھی فائدہ اٹھاسکتے ہیں، جنہیں اٹھنے اور بیٹھنے میں مشکل پیش آتی ہے یا جن کا ہاتھ بجلی کے نظام تک نہیں پہنچ پاتا۔


یہ بھی پڑھیں: چھ پاکستانی سافٹ ویئر انجینئر ایک لاکھ ڈالر تںخواہ پر مقرر


یاسر کی ایجاد نے برطانیہ بھر میں دھوم مچادی ہے، اسکول کے زمانے سے لے کر اب تک یاسر اس سادہ سی ایجاد کی بدولت تیرہ کروڑ روپے کی رقم بطورسرمایہ جمع کرچکا ہے, اب یاسر خٹک نے ایک ٹیکنالوجی کمپنی (اسٹارٹ اپ) بنالی ہے اور ان کی ایجاد کو اگر صرف برطانیہ میں ہی استعمال کیا جائے تو اس سے سالانہ پونے 2 ارب پونڈ کی بچت کی جاسکتی ہے۔


Pakistani born Britisher becomes millionaire… by arynews

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں