The news is by your side.

Advertisement

ڈیڑھ سال تک کرونا وائرس کا شکار رہنے والا شخص

دنیا بھر کے ماہرین کا کہنا ہے کہ کوئی شخص 8 ہفتوں تک کرونا وائرس کا شکار رہ سکتا ہے، لیکن حال ہی میں ایک تحقیق سے علم ہوا کہ ایک شخص ایسا بھی ہے جو ڈیڑھ سال تک کرونا وائرس کا شکار رہا۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق برطانوی سائنس دانوں کی جانب سے کی جانے والی ایک منفرد تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ایک شخص مسلسل ڈیڑھ سال تک کرونا کا شکار بھی رہا۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ مذکورہ شخص معلوم شدہ سب سے طویل عرصے تک کرونا کا شکار رہنے والا شخص ہے، اس سے قبل کی بعض تحقیقات سے معلوم ہوا تھا کہ لوگ 8 ہفتوں تک کرونا کا شکار رہ سکتے ہیں۔

علاوہ ازیں ماضی میں یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ ایک شخص تقریباً ایک سال تک کرونا کا شکار رہا مگر اب تازہ تحقیق سے معلوم ہوا کہ برطانوی شخص مسلسل 505 دن تک وبا کا شکار رہا۔

برطانوی وزارت صحت کے سائنسدان ڈاکٹر لیوک بلاگدون سنیل نے بتایا کہ ان کی ٹیم کی جانب سے کی جانے والی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ایک شخص ڈیڑھ سال تک کرونا کا شکار رہا۔

رپورٹ کے مطابق ماہرین نے تصدیق کی کہ ڈیڑھ سال تک کرونا کا شکار رہنے والے شخص کا مدافعتی نظام بہت کمزور تھا اور وہ دیگر متعدد بیماریوں میں بھی مبتلا تھا۔

ماہرین نے ان افراد پر تحقیق کی جو کمزور مدافعتی نظام کی وجہ سے کافی عرصے تک بیماری میں مبتلا رہے اور دوران تحقیق سائنس دانوں نے اس کی وجوہات جاننے کی کوشش کی۔

ماہرین کی جانب سے کی جانے والی تحقیق سے معلوم ہوا کہ کمزور مدافعتی نظام کے حامل مزید دو افراد بھی مسلسل ایک سال تک کرونا کا شکار رہے جب کہ دو افراد 8 ہفتوں تک وبا میں مبتلا رہے۔

ماہرین نے بتایا کہ طویل عرصے تک کرونا کا شکار رہنے والے افراد ایچ آئی وی،کینسر اور دیگر موذی بیماریوں میں بھی مبتلا رہے، جس وجہ سے ان کا مدافعتی نظام کمزور رہا۔

رپورٹ کے مطابق طویل عرصے تک کرونا کا شکار رہنے والے تقریبا تمام افراد صحت یاب ہونے میں کامیاب ہوگئے، تاہم تاحال ایک شخص کرونا میں مبتلا ہے اور انہیں ایک سال سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے۔

سائنسدانوں نے بتایا کہ جو شخص ڈیڑھ سال تک کرونا کا شکار رہا، وہ سنہ 2021 میں چل بسا تھا، تاہم ماہرین نے کرونا کو ان کی موت کا واحد سبب دینے سے گریز کیا، کیوں کہ وہ متعدد دیگر بیماریوں میں بھی مبتلا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں