The news is by your side.

برطانیہ میں فوج کو ‘اسٹینڈ بائے’ رہنے کا حکم

لندن: برطانیہ میں پیٹرول بحران شدت اختیار کر گیا ہے جس کے بعد حکومت نے فوج کو ایندھن کی ترسیل کے لیے تیار رہنے کی ہدایت کردی ہے۔

برطانوی میڈیا رپورٹ کے مطابق مسلسل چوتھے دن پیٹرول پمپس کی بندش پر آرمی کو مدد کے لیے تیار کیا گیا، ڈیڑھ سو سے زائد ملٹری ٹینکر ڈرائیورز کو تیار کیا گیا ہے، یہ تیاری ممکنہ رش سے پیدا ہونے والی صورتحال پر قابو پانے کے لیےکی گئی ہے۔

ایندھن کی ترسیل کو معمول پر لانے کے لیے حکومت کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں فوری طور پر فوجی ٹینکر ڈرائیورں کی محدود تعداد کو تیار رکھا جائے گا اور اگر ضرورت پڑی تو انہیں تعینات کیا جائے گا۔

ایندھن کے بحران پر قابو پانے کے لیے حکومت کی جانب سے فوج کو متحرک کرنے کا اقدام ایسے وقت میں سامنے آیا جب فلنگ اسٹیشنز تک ایندھن کا زیادہ اسٹاک پہنچ نہیں پا رہا۔

گذشتہ ہفتے ایندھن کی فراہمی میں کمی کے انتباہ کے بعد برطانوی عوام افراتفری کا شکار رہی اور لوگ ایندھن بھروانے کے لیے گھنٹوں قطاروں میں انتظار کرتے رہے جس کے نتیجے میں ملک بھر کے بیشتر فلنگ اسٹیشنز پر ایندھن ختم ہوا۔

دوسری جانب برطانیہ میں آزاد فیول ریٹیلرز کی نمائندہ پیٹرول ریٹیلرز ایسوسی ایشن کے مطابق ملک کے کچھ علاقوں میں پچاس سے نوے فی صد تک فلنگ اسٹیشنز پر ایندھن ختم ہو چکا ہے۔

فیول انڈسٹری کا کہنا ہے کہ ملک میں فیول کی کوئی کمی نہیں بلکہ پمپس تک پیٹرول اور ڈیزل کی ترسیل کے مسائل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں