The news is by your side.

Advertisement

مرطوب علاقوں میں اگنے والا دنیا کا طویل القامت درخت دریافت

سو میٹر لمبے درخت کو مینارا کا نام دیا گیا ہے، جو ملایا زبان کا لفظ ہے

لندن: برطانیہ اور ملیشیا کے سائنس دانوں نے کہا ہے کہ انھوں نے مرطوب علاقوں (ٹراپیکل خطے) میں اگنے والا دنیا کا طویل القامت درخت دریافت کیا ہے.

تفصیلات کے مطابق اس درخت کی لمبائی 100 میٹر (328فٹ) ہے، پیلے رنگ کا یہ قد آور درخت گزشتہ برس یونیورسٹی آف ناٹنگھم کی ایک ٹیم نے بورنیو کے جنگلات میں دریافت کیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آکسفورڈ یونیورسٹی کے محققین نے اس درخت کی لمبائی کی تصدیق کے لیے تھری ڈی سکینز کے ساتھ ساتھ ڈرون فلائیٹ بھی لی ہیں۔

یہ طویل القامت درخت ملیشیا کی ریاست سابا کے علاقے دانم ویلی سے دریافت کیا گیا۔ اس درخت کو مینارا کا نام دیا گیا ، جو ملایا زبان کا لفظ ہے اور اس کے معنی ہیں مینار۔

مزید پڑھیں: ہر 10 مر لے کے گھر میں ایک درخت لازمی قرار دینے کی منصوبہ بندی

مقامی کوہ پیما اندنگ جامی نے فیتے کے ذریعے درخت کی لمبائی ماپی ہے، ان کا کہنا ہے کہ یہ ایک خوفناک اور تیز ہوا سے مقابلہ کرنے والی چڑھائی تھی۔

انھوں نے مزید کہا کہ لیکن ایمان داری سے کہوں، تو بلندی سے نظارہ ناقابل یقین تھا۔ مجھے نہیں معلوم کہ اس کے علاوہ کیا کہو، مگر بہت، بہت حیرت انگیز منظر ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں