برطانیہ میں بے روزگاری کی شرح میں تاریخی کمی -
The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ میں بے روزگاری کی شرح میں تاریخی کمی

لندن: برطانیہ میں بے روزگاری کی شرح گزشتہ 40 سال کی کم ترین سطح پر آگئی۔ شرح بے روزگاری میں یہ کمی صرف 3 ماہ کے اندر دیکھنے میں آئی ہے۔

برطانیہ کے قومی ادارہ اعداد و شمار کے مطابق برطانیہ میں بے روزگار افراد کی تعداد 13 لاکھ 60 ہزار سے کم ہو کر 65 ہزار ہوگئی ہے۔

اس کے ساتھ ساتھ تنخواہوں میں اضافے کے رجحان میں کمی آرہی ہے۔ گزشتہ 3 ماہ کے دوران تنخواہوں میں اوسط صرف 2.7 فیصد اضافہ دیکھا گیا جو گزشتہ سال کے مقابلے میں کم ہے۔

ادارے کے مطابق برطانیہ میں کام کرنے والے یورپی یونین ممالک کے شہریوں کی تعداد میں بھی کمی آئی ہے۔

یورپی یونین ممالک کے شہریوں کی تعداد میں بھی کمی کے رجحان کا آغاز 2016 میں بریگزٹ ووٹ کے بعد سے ہوا تھا۔

یورپی یونین کے علاوہ دیگر ممالک کے ملازمین کی تعداد میں 74 ہزار افراد کا اضافہ ہوا ہے۔

سینٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن کے مطابق برطانیہ میں ملازمتوں میں اضافہ ہو رہا ہے تاہم ملازمین کی تعداد میں کمی آرہی ہے۔

سی بی آئی کے شعبہ ملازمت کے سربراہ میتھیو پرسیول کے مطابق حکومت کو یورپی یونین ممالک کے ملازمین کے لیے ’نو ڈیل‘ کی صورتحال رکھن چاہیئے جس میں بریگزٹ سے متعلق کوئی بھی ڈیل ان کی ملازمت پر اثر انداز نہ ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں