The news is by your side.

Advertisement

یوکرائن نے روس سے ملحقہ سرحدی علاقے میں مارشل لاء لگادیا

کیو: یوکرائن نے روس سے ملحقہ سرحدی علاقے میں تیس روز کے لیے مارشل لاء نافذ کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق روس اور یوکرائن کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے پیش نذر یوکرائینی پارلیمنٹ نے روس سے ملحقہ سرحدی علاقے میں تیس روز کے لیے مارشل لاء لگانے سمیت 31 مارچ کو صدارتی الیکشن کرانے کے بل کی بھی منظوری دے دی۔

مارشل لاء کے نفاذ کے لیے ان ریاستوں کا انتخاب کیا گیا ہے جن کی سرحدیں روس سے ملتی ہیں جبکہ دارالحکومت میں مارشل لاء نافذ نہیں ہوگا۔

یوکرائن صدر کا کہنا تھا کہ مارشل لاء کا نفاذ انٹیلی جنس رپورٹس کے بعد کیا گیا ہے جس میں روس کی جانب سے مختلف علاقوں میں حملے کی تیاریوں کی مصدقہ اطلاعات دی گئی تھیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مارشل لاء کے نفاذ سے ملک میں جاری جمہوری اور سیاسی عمل پر کوئی فرق نہیں پڑے گا اور ملک میں ہونے والے صدارتی الیکشن بھی اپنے مقررہ وقت پر ہوں گے۔

دوسری جانب روس اور یوکرائن کی صورت حال پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسئلے کے پر امن حل کے لیے یورپی رہنماؤں کو مثبت کردار ادا کرنا چاہئے۔

مزید پڑھیں: روس کا یوکرائنی جنگی جہازوں و کشتی پر قبضہ، حالات کشیدہ

واضح رہے کہ روس نے کیراج پورٹ پر 3 یوکرائینی بحری جہازوں پر فائرنگ کرکے 6 اہلکاروں کو زخمی کردیا تھا اور تاحال یوکرائن کے بحری جہاز اور عملہ روس کے قبضے میں ہے۔

اقوام متحدہ متحدہ کے سلامتی کونسل نے روسی اقدامات کے باعث ہنگامی اجلاس کا انعقاد کیا ہے تاکہ روس یوکرائن کے درمیان حالیہ کشیدگی کو کم یا ختم کیا جاسکے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں