The news is by your side.

Advertisement

یوکرین میں ایمرجنسی کے نفاذ سے متعلق بڑا فیصلہ

کیف: یوکرین میں ایمرجنسی کے نفاذ سے متعلق بڑا فیصلہ سامنے آیا ہے، روسی حملے کے خطرے کے پیش نظر یوکرین میں ایمرجنسی نافذ کرنے کی منظوری دے دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین کی سلامتی کونسل نے ملک میں ایمرجنسی کی منظوری دے دی، یوکرین ملک گیر ہنگامی حالت متعارف کرائے گا، جس میں روسی حملے کے بڑھتے خدشے کے پیش نظر ملک کو پرسکون رکھنے اور اپنی معیشت کی حفاظت کے لیے خصوصی پابندیاں لاگو ہوں گی۔

کونسل کے سکریٹری اولیکسی ڈینیلوف نے بدھ کے روز کہا کہ ابھی اس اقدام کو پارلیمنٹ سے باضابطہ طور پر منظور ہونا ہے۔ ڈینیلوف نے کہا کہ وہ یوکرین کی پارلیمنٹ کو ایک رپورٹ پیش کریں گے، جس میں سیاست دانوں سے اس ہفتے اضافی حفاظتی اقدامات کی منظوری متوقع ہے۔

اس اقدام کا اطلاق یوکرین کے تمام حصوں پر ہوگا سوائے اس کے 2 روسی حمایت یافتہ مشرقی علیحدگی پسند علاقوں ڈونیٹسک اور لوہانسک کے، جہاں 2014 میں ایک مہلک بغاوت ہوئی تھی، جس میں 14,000 سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

ڈینیلوف نے کہا کہ ہنگامی حالت 30 دن تک رہے گی اور اسے مزید 30 دن تک بڑھایا جا سکے گا، یوکرین کا ہر علاقہ یہ انتخاب کر سکے گا کہ کون سے مخصوص اقدامات کو لاگو کرنا ہے، اقدامات پر منحصر ہے کہ وہ کتنے ضروری ہو سکتے ہیں۔

ڈینیلوف نے کہا کہ ایمرجنسی اقدام کے تحت پبلک آرڈر کے نفاذ میں اضافہ کیا جا سکتا ہے، اس میں مخصوص قسم کی نقل و حرکت کو محدود کرنا، گاڑیوں کی جانچ میں اضافہ، یا لوگوں سے مختلف قسم کی دستاویز دکھانے کے لیے کہا جانا شامل ہو سکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں