The news is by your side.

میزائل یوکرین سے داغا گیا، تصدیق ہونے کے بعد پولینڈ کے صدر کا رد عمل

وارسا: اس بات کی تصدیق ہونے کے بعد کہ میزائل یوکرین سے داغا گیا، پولینڈ کے صدر نے اسے حادثہ قرار دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پولینڈ کے صدر نے اپنے ملک میں میزائل گرنے کو حادثہ قرار دے دیا، دوسری طرف یوکرین نے بھی اس سلسلے میں تحقیقات میں مکمل تعاون کا اعلان کر دیا ہے۔

ابتدائی طور پر اس حادثے کا ذمہ دار روس کو سمجھا جا رہا تھا، پولینڈ اور نیٹو حکام نے بغیر تحقیقات کے روس پر الزام دھر دیا تھا، جب کہ روس نے حملے کی تردید کر دی تھی۔

تحقیقات کے بعد آخر کار امریکا اور نیٹو ممالک بھی مان گئے کہ پولینڈ میں گرنے والا میزائل روس سے نہیں بلکہ یوکرین سے فائر ہوا، اس سے قبل نیٹو حکام نے کہا تھا کہ پولینڈ کے میزائل حملے کا ذمہ دار روس ہے، جب کہ امریکی حکام نے بھی بالواسطہ طور پر یہی کہنے کی کوشش کی، حکام نے کہا کہ پولینڈ میں گرنے والا میزائل یوکرین کی افواج نے آنے والے روسی میزائل پر داغا تھا۔

روس یا یوکرین : پولینڈ پر میزائل کس نے مارا؟ اہم انکشاف

واضح رہے کہ پولیںڈ میں میزائل گرنے سے دو افراد ہلاک ہوئے تھے، خبر آنے کے بعد سوشل میڈیا پر روس کے خلاف ایک طوفانی مہم شروع ہو گئی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں