The news is by your side.

یوکرینی فوج نے ایک بار پھر اپنا ہی بڑا نقصان کر ڈالا

یوکرینی فوج کے ایئر ڈیفنس نظام نے دونستک کے شہر کوراخف میں ایک بار پھر اپنے ہی ایک مگ 29 جنگی طیارے کو مار گرایا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق یہ دعویٰ روسی سینٹ کے نائب سربراہ نے کی جانب سے کیا گیا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ یوکرینی فوج کے ائیرڈیفنس نظام نے دونتسک علاقے کے شہر کوراخف شہر میں اپنے ہی ایک مگ 29 جنگی طیارے کو مار گرایا ہے۔

رپورٹ کے مطابق روس سے نبرد آزما یوکرین کی جانب سے اپنے ہی جنگی اہداف کو نشانہ بنانے کا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں ہے۔ اس سے قبل گزشتہ سال 13 دسمبر کو بھی یوکرینی افواج کی مختلف بریگیڈز نے ایک دوسرے پر توپخانے اور ہلکے ہتھیاروں سے حملے کیے تھے۔

لوہانس علاقے کی افواج کے کمانڈر آندرے ماروچکو نے یوکرینی فوج میں ہونے والے ایسے واقعات کے بارے میں کہا کہ یہ کمانڈ اینڈ کنٹرول سسٹم کی عدم موجودگی اور باہمی رابطے نہ ہونے کا ثبوت ہیں اور یہ بھی ممکن ہے کہ دوسرے ممالک سے آنے والے کرائے کے فوجیوں اور یوکرینی افواج میں اختلاف کی وجہ سے بھی یہ واقعات پیش آ رہے ہوں۔

25 واضح رہے کہ جب گزشتہ سال فروری میں روس اور یوکرین جنگ کا آغاز ہوا تھا اس وقت بھی یوکرینی ائرڈیفنس نے اپنے ہی ایک سخوئی 27 جنگی طیارے کو مار گرایا تھا جو کیف شہر کے اوپر پرواز کر رہا تھا اور اس واقعے میں الیکسنڈر اکسانچنکو مشہور یوکرینی پائلٹ مارا گیا تھا۔

یوکرینی افواج میں ہونے والے اس نوعیت کے پے در پے واقعات کے باعث امریکا نے اپنا پیٹریاٹ میزائل دفاعی نظام یوکرینی افواج کے حوالے کرنے سے انکار کر دیا ہے جس کی مالیت ایک اعشاریہ 8 بلین ڈالر بتائی جا رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں