The news is by your side.

افغان جنگ میں ناکامی کیوں ہوئی؟ اعلیٰ فوجی قیادت نے سب بتا دیا

امریکی فوج کے چیئرمین جوائنٹ چیف آف اسٹاف جنرل مارک ملی نے افغان جنگ کو اسٹریٹجک ناکامی قرار ‏دیتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان سے انخلا نے امریکا کی ساکھ کو بہت نقصان پہنچایا ہے۔

امریکی سینیٹ کی آرمڈ فورسز کی کے اراکین نے افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا، دوحا معاہدے کی بعد کی ‏صورتحال اور طالبان کے اقتدار میں آنے سمیت افغانستان کی موجودہ صورتحال پر وزیردفاع لائیڈ آسٹن، جوائنٹ ‏چیف کے چیئرمین جنرل مارک ملی اور امریکی سینٹرل کمان کے سربراہ جنرل فرینک سے 6 گھنٹے تک سخت ‏سوالات کیے۔

جنرل مارک ملی نے کہا کہ اس وقت کے وزیرخارجہ پومپیو کو بتایا چین کے ساتھ میرے رابطےمیں کیا ہوا اور ‏میں نےچینیوں سےکہاٹرمپ ان پرحملہ نہیں کریں گے اپنےفرائض کےحصےکےطورپرچین سےرابطہ کیاتھا۔

انہوں نے کہا کہ میرافرض امریکاکواندرونی و بیرونی دشمنوں سے بچاؤں، افغانستان سےدہشت گردی کاخطرہ اب ‏بھی موجود ہے افغانستان کی جنگ ایک اسٹریٹیجک ناکامی تھی یہ جنگ شرائط پر ختم نہیں ہوئی جو چاہتے ‏تھے۔

امریکی وزیردفاع نے سوال کے جواب میں کہا کہ ایک گولی چلائے بغیر افغان فوج کے ہتھیار ڈالنے پرحیران ہوئے ‏ماننا پڑے گا ہمیں افغان حکومت میں کرپشن کی سطح کا اندازہ نہیں تھا۔

کمانڈرسینٹرل کمانڈ نے کہا کہ توقع نہ تھی طالبان چندگھنٹےمیں کنٹرول حاصل کرلیں گے افغانستان میں جنگی ‏مشن پیچیدہ تھا جیساکہ انخلا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں