یونیسکو کی پاکستان کے 8مقامات کو تاریخی ورثہ قرار دینے کی تجویز منظور -
The news is by your side.

Advertisement

یونیسکو کی پاکستان کے 8مقامات کو تاریخی ورثہ قرار دینے کی تجویز منظور

نیویارک : اقوام متحدہ کے زیلی ادارے یونیسکو نے پاکستان کے آٹھ مقامات کو تاریخی ورثہ قرار دینے کی تجویز منظور کرلی ہے۔

اقوام متحدہ کے زیلی ادارہ برائے تعلیم، سائنس، ثقافت یونیسکو نے پاکستان کے آٹھ مقامات کو تاریخی ورثے کی حثیت دینے کی تجویز کو منظور کرلیا ہے، ان مقامات میں ڈر اور قعلہ چولستان، بلوچستان کا خوبصورت علاقہ ہنگول، ثقافتی لحاظ سے منفرد حیثیت رکھنے والا نگرپارکر جبکہ مرکزی نیشنل قراقرم اور ڈیوسائی گلگت بلتستان پارک، زیارت کے وسیع جونپر کے جنگلات اور آب پاشی کے لیے بنائے گیا کاریز سسٹم اور کھیوڑا کی نمک کی کانیں شامل ہیں۔

ڈپارٹمنٹ آف ارکیلوجی اور میوزیم کے مطابق جیسے ہی یونیسکو کی جانب سے منظوری کا اعلان ہوگا،

ان جگہوں کے بارے میں دستاویزات کی تیاری شروع کر دی جائے گی اور دو سے تین سال کے عرصے میں یہ کام مکمل کر لیا جائے گا۔

خیال رہے کہ پاکستان کے محکمہ آثار قدیمہ اور میوزیم نے آٹھ ناموں کی تجویز دی تھی۔


مزید پڑھیں :  شاہی قلعہ اور شالیمار باغ کو ورلڈ ہیرٹج فہرست سے نکالے جانے کا خدشہ


واضح رہے کہ اورنج لائن ٹرین سے لاہور کے تاریخی ورثہ شالیمار باغ اور شاہی قلعہ کو ممکنہ نقصانات کا جائزہ لینے کے لیے آنی والی یونیسکو ٹیم کو ویزے جاری کرنے میں تاخیر کا سامنا ہے، مشن نے دورہ نہ کیا تو شاہی قلعہ اور شالیمار باغ کو ورلڈ ہیرٹج فہرست سے نکالے جانے کا خدشہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں