The news is by your side.

Advertisement

ناخوش گوار شادی سے متعلق محققین کا دل دہلا دینے والا انکشاف

محققین نے ایک ریسرچ کے بعد انکشاف کیا ہے کہ ناخوش گوار رشتے مردوں کے لیے تمباکو نوشی سے بھی زیادہ خطرناک ثابت ہو سکتے ہیں، سائنسی ماہرین نے دعویٰ کیا ہے کہ مجبوری اور ناخوش گوار رشتے تمباکو نوشی سے زیادہ خطرناک ہو سکتے ہیں۔

اس سلسلے میں محققین نے 30 برسوں کے دوران 10 ہزار مردوں کی صحت اور موت کے اعداد و شمار کا مطالعہ کیا، جس سے یہ بات سامنے آئی کہ شادی سے ناخوش رہنا، یا شادی کو برا سمجھنا مردوں کو امراض قلب، فالج اور شریانوں کے بند ہونے سے اسی طرح موت کی طرف لے جاتا ہے، جیسے تمباکو نوشی اور جسمانی سرگرمی کی کمی، اور ان ان اموات کی تعداد 69 فی صد ہے۔

مطالعے کے مصنفین کا کہنا ہے کہ مردوں کی صحت کو بہتر بنانے اور طویل عمر تک ان کی مدد کرنے کے لیے میرج تھراپی کو فروغ دینا ضروری ہے۔

تل ابیب یونیورسٹی کے محققین کے مطابق مطالعے سے دیکھا گیا کہ شادی کے معیار اور فیملی لائف سے زندگی کی طوالت پر اثرات مرتب ہوتے ہیں، ریسرچ میں شامل جن مردوں نے بتایا کہ ان کی شادی ناکام ہے، وہ کامیاب شادی والے مردوں کے مقابلے میں کم عمر میں مر گئے۔

یاد رہے کہ جولائی 2018 میں نیواڈا اور مشیگن کی یونیورسٹیز کے محققین نے ایک تحقیق کے نتائج میں کہا تھا کہ ناخوش گوار شادی سے جسمانی صحت پر بے تحاشا منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں، اس تحقیق کے دوران ماہرین نفسیات نے 373 جوڑوں کو 16 برس تک مانیٹر کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں