The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں 12 روز سے جاری کشیدگی میں اب تک 49 ہلاک اور 3 ہزارافراد زخمی ہو گئے ہیں

سرینگر: مقبوضہ وادی میں کشمیری مجاہد برھان وانی شہادت کے بعد بھی کشیدگی برقرار ہے،بارہ دنوں میں بھارتی بربریت کے ہاتھوں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 49 تک پہنچ گئی ہے جب کہ 3 ہزار سے زائد کشمیری زخمی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کشمیری مجاہد برھان وانی کی شہادت کو 12 دن گزرنے کے باوجود حالات بدستور کشیدہ ہیں کئی علاقوں میں کرفیو نافذ ہے جس کے باعث بازار، دفاتر اور پیٹرول پمپس بند ہیں جب کہ فوجی اہلکاروں نے جگہ جگہ ناکے لگا رہے ہیں جبکہ پیدل دستوں کا گشت بھی جاری ہے جس سے مقبوضہ کشمیر میں خوف وہراس پھیل گیا ہے۔

دوسری جانب سری نگر سمیت کئی شہروں میں انٹرنیٹ اور موبائل سروس بند ہونے سے لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے،اور اندرون ملک و بیرون ملک رابطوں میں نہایت مشکلات کا سامناکرنا پڑرہا ہے۔

مزید جانیے : بھارتی فوج کی بربریت، حریت پسند برہان وانی شہید

حریت رہنما یاسین ملک کو بزدل فورسز نے حراست میں لیا ہوا ہے جب کہ میر واعظ عمر فاروق، شبیر شاہ اور سید علی گیلانی سمیت درجنوں حریت رہنماؤں کو گھروں میں نظربند رکھا ہوا ہے،کرفیو کے باوجود آزادی کے متوالے حریت پسند کشمیری اپنے محبوب رہنماؤں کی گرفتاری اور نظر بند کیے جانے کے خلاف سراپا احتجاج ہیں اور قابض بھارتی فوجیوں کے ظلم کے خلاف بھرپور آواز اُٹھا رہے ہیں۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں