The news is by your side.

Advertisement

امریکا: کرونا ویکسین نہ لگوانے پر اسپتال نے مریض کے ہارٹ ٹرانسپلانٹ سے انکار کردیا

واشنگٹن: امریکا کے شہر بوسٹن میں دل کی پیوند کاری کے منتظر ایک مریض کو، کرونا ویکسین نہ لگوانے پر سرجری سے منع کردیا گیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق مریض کے والد ڈیوڈ فرگوسن کا کہنا ہے کہ ان کا 31 سالہ بیٹا موت کے دہانے پر کھڑا ہارٹ ٹرانسپلانٹ کا منتظر ہے۔ اس نے اسپتال میں کرونا ویکسی نیشن کروانے سے انکار کردیا ہئ کیوںکہ وہ اس کے بنیادی اصولوں کے خلاف ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ اسپتال کا عملہ میرے بیٹے پر ویکسین لگوانے کے لیے دباؤ ڈال رہے ہیں کہ اگر اس نے ویکسی نیشن نہیں کروائی تو وہ اسے ہارٹ ٹرانسپلانٹ کے منتظر مریضوں کی فہرست سے باہر نکال دیں گے۔

دوسری جانب بوسٹن کے برگھم اینڈ ویمنز اسپتال کی ترجمان نے مریض کے ہارٹ ٹرانسپلانٹ سے انکار کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی بھی قسم کے آپریشن اور اعضا کے ٹرانسپلانٹ کے لیے کرونا ویکسی نیشن کا مکمل ہونا لازمی ہے۔

ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ ہمارے پاس سی ڈی سی (مرکز برائے دافع امراض اور تحفظ) کی تجویز کردہ تمام ویکسین بشمول کووڈ 19 موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم ٹرانسپلانٹ کے امیدواروں میں آپریشن کو کامیاب بنانے کے ساتھ ساتھ مریض کی جلد از جلد بحالی بھی کرنا چاہتے ہیں، کیوںکہ اتنی بڑی جراحی کے بعد انسان کا مدافعتی نظام کمزور پڑ جاتا ہے۔

دوسری جانب نیویارک یونیورسٹی کے طبی ماہر آرتھر کیپلین نے میڈیا کو بتایا کہ کسی بھی ٹرانسپلانٹ میں آپ کا مدافعتی نظام ختم ہوجاتا ہے اور پھر کرونا وائرس آپ کو اپنا نشانہ بنا سکتا ہے، یہی وجہ ہے کہ غیر ویکسین شدہ افراد کو ٹرانسپلانٹ کے لیے منع کیا جارہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں