The news is by your side.

Advertisement

آشرم میں کھڑی کار سے لاپتا نابالغ بچی کی لاش برآمد

لکھنؤ: بھارتی ریاست اُتر پردیش کے ایک آشرم میں کھڑی کار سے لاپتا نابالغ بچی کی لاش برآمد ہوئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کے ایک مشہور مذہبی رہنما آسارام باپو کے آشرم میں کھڑی کار سے 3 دنوں سے لاپتا ایک 13 سالہ بچی کی لاش برآمد ہو گئی ہے۔

آسارام اس وقت جیل میں قید ہیں، تاہم ان کے آشرم میں موجود ایک آلٹو کار سے نابالغ بچی کی لاش برآمدگی نے کئی طرح کے سوال کھڑے کر دیے ہیں۔

رپورٹس کے مطابق بچی 5 اپریل سے لاپتا تھی، آشرم میں کھڑی کار سے بہت بدبو آ رہی تھی جس کے بعد آشرم کے چوکیدار نے کار کو کھول کر دیکھا تو اس میں بچی کی لاش پڑی ہوئی تھی۔

اس خبر نے آس پاس کے علاقوں میں سنسنی پھیلا دی ہے اور خبر ملتے ہی موقع پر پولیس بھی پہنچ گئی، پولیس اور فرانزک ٹیم نے آشرم اور گاڑی کی جانچ شروع کر دی ہے۔

واضح رہے کہ آسا رام کے آشرم سے لاش ملنے کا یہ پہلا کیس نہیں ہے، اس سے پہلے بھی کئی واقعات سامنے آ چکے ہیں، 2008 میں گجرات میں آسا رام کے آشرم ’گروکل‘ میں حیرت انگیز طور پر 2 طالبات غائب ہو گئی تھیں، بعد میں ان طلبہ کی لاشیں سابرمتی ندی کے ساحل پر مل گئی تھیں۔

گجرات کے بعد مدھیہ پردیش کے چھندواڑا ضلع میں موجود گروکل آشرم میں بھی ایک بچے کی موت کا معاملہ سامنے آیا تھا، آشرم کے بیت الخلا میں بچے کی لاش ملی تھی جس کے بارے میں بتایا گیا تھا کہ اس کی موت باتھ روم میں گرنے سے ہوئی۔

خیال رہے کہ جنسی زیادتی کیس میں مذہبی رہنما آسا رام کو جودھپور کی عدالت نے اپریل 2018 میں مجرم قراردیتے ہوئے تاحیات قید کی سزا سنا دی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں