The news is by your side.

Advertisement

بھارت لاک ڈاؤن، شوہر سے جھگڑا، پانچ بچوں کو دریا میں‌ پھینک کر ماں نے بھی خود کشی کرلی

نئی دہلی: بھارتی ریاست اترپردیش کے علاقے یوپی میں خاتون نے شوہر سے جھگڑے کے بعد اپنے پانچ بچوں کو دریا میں دھکا دینے کے بعد خود بھی خودکشی کرلی۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق یوپی کے ضلع بدوہی کی رہائشی خاتون نے اپنے شوہر سے جھگڑے کے بعد پانچ بچوں کو اتوار کی صبح گنگا ندی میں پھینکا اور پھر خود بھی کود گئی۔

پولیس کے مطابق گاؤں جہانگیرا کے رہائشی مری دُل عرف منا کا اپنی اہلیہ منجو سے جھگڑا اُس وقت شروع ہوا جب اُس نے گھر کے اخراجات کے لیے پیسے مانگے۔

شوہر نے پیسے دینے سے انکار کیا تو خاتون اپنے پانچ بچوں کے ہمراہ گھاٹ پر گئی اور اُس نے تمام بچوں کو دریا میں دھکا دیا اور پھر خود بھی کود گئی۔

پولیس کے مطابق مرنے والوں میں 35 سالہ منجو، 3 سالہ شنکر، تین سالہ کیشاو، تین سالہ پوجا، چھ سالہ سرسوتی ، دس اور بارہ سالہ لڑکیاں بھی شامل ہیں۔ عینی شاہد کے مطابق انہوں نے بچوں کو بچانے کی کوشش کی مگر وہ ناکام رہے۔

بدوہی کے ضلعی مجسٹریٹ اور پولیس سپریٹینڈینٹ رامبادن سنگھ حادثے کے بعد جائے وقوعہ پہنچے اور انہوں نے لاشیں نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن شروع کروایا البتہ ابھی تک بچوں‌ کی لاشیں‌ نہ مل سکیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق پڑوسی کا کہنا ہے کہ منجو کا ذہنی توازن ٹھیک نہیں تھا البتہ شوہر کا دعویٰ ہے کہ اُن کی اہلیہ بالکل ٹھیک تھیں اور انہیں اس بات کا علم نہیں کہ انہوں نے بچوں سمیت یہ قدم کیوں اٹھایا۔

منا کا کہنا تھا کہ کرونا لاک ڈاؤن کی وجہ سے وہ گزشتہ کئی روز سے کام پر نہیں جا رہا جس کی وجہ سے معاشی تنگ دستی کا سامنا تھا اور گھر میں بھی فاقے شروع ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں