The news is by your side.

Advertisement

اقوام متحدہ کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر نئی رپورٹ جاری

کشمیر رپورٹ نے بھارت کے جھوٹ سے پردہ اٹھا دیا ہے: سفیر طاہر اندرابی

برسلز: اقوام متحدہ کمشنر برائے انسانی حقوق کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر نئی رپورٹ جاری کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مئی 2018 سے اپریل 2019 تک کشمیر کے دونوں حصوں کا جائزہ لیا گیا، بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں 1990 کی پرتشدد پالیسی کو دوبارہ متعارف کرایا۔

جنیوا سے شایع شدہ رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج غیر قانونی حراست، تشدد، جبری ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے، مقبوضہ کشمیر میں 2018 میں 160 افراد کو قتل اور 1253 افراد کو بیلٹ گن کے ذریعے بینائی سے محروم کر دیا گیا۔

رپورٹ میں اقوام متحدہ کو تجویز دی گئی ہے کہ وہ پیش کردہ اعداد و شمار کی روشنی میں ایک بین الاقوامی کمیشن آف انکوائری قائم کرے تاکہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی آزادانہ تحقیقات کی جا سکے۔

مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر اقوام متحدہ کی رپورٹ کی تیاری میں سول سوسائٹی جے کے سی سی ایس نامی تنظیم نے کردار ادا کیا۔

یہ بھی پڑھیں:  مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم، نیویارک ٹائمز کی چشم کشا رپورٹ

ادھر پاکستانی سفیر طاہر اندرابی نے کہا ہے کہ انسانی حقوق کونسل نے کشمیر پر دوسری رپورٹ شایع کر دی ہے، بھارت کو کشمیری عوام کا حق خود ارادیت تسلیم کرنا چاہیے۔

طاہر اندرابی کا کہنا تھا کہ کشمیر رپورٹ نے بھارت کے جھوٹ سے پردہ اٹھا دیا ہے، رپورٹ میں بھارت کے انسانیت سوز مظالم کا تفصیلی ذکر ہے۔

انھوں نے کہا کہ عالمی برادری بھارتی افواج کے مظالم رکوانے کے لیے بھارت پر زور ڈالے، انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کے لیے اقوام متحدہ عالمی انکوائری کمیشن قائم کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں