The news is by your side.

Advertisement

‌آزاد نظم کے بانی محمد دین تاثیر کا تذکرہ

ڈاکٹر تاثیر اردو ادب میں آزاد نظم کی بنیاد رکھنے والے شعرا میں‌ شمار ہوتے ہیں۔ آج ان کا یومِ وفات ہے۔ 30 نومبر 1950ء کو اردو کے اس معروف ادیب، شاعر، نقاد اور ماہرِ تعلیم کا انتقال ہوگیا تھا۔

محمد دین تاثیر 1902ء قصبہ اجنالہ امرتسر میں پیدا ہوئے۔ ایم اے تک تعلیم لاہور سے حاصل کی اور بعد میں کیمبرج سے انگریزی میں پی ایچ ڈی کیا، وہ پہلے ہندوستانی تھے جنھیں یہ اعزاز حاصل ہوا۔

ڈاکٹر تاثیر کا ایک حوالہ درس و تدریس بھی ہے۔ وہ اسلامیہ کالج لاہور کے پرنسپل رہے۔

غزل گوئی کے علاوہ انھوں نے نظم کے میدان میں‌ روایت سے ہٹ کر تجربہ کیا اور آزاد نظم کو فروغ دیا۔ ان کے شعری مجموعوں میں آتش کدہ اور نثری مضامین مقالات تاثیر اور نثرِ تاثیر کے نام سے اشاعت پزیر ہوئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں