سلامتی کونسل میں یہودی بستیوں کے خلاف قرارداد منظور -
The news is by your side.

Advertisement

سلامتی کونسل میں یہودی بستیوں کے خلاف قرارداد منظور

نیویارک : اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نےمشرقی فلسطین میں یہودی بستیوں کی تعمیرکےخلاف قراردادمنظورکر لی۔

تفصیلات کےمطابق مشرقی فلسطین میں اسرائیل کی جانب سے یہودیوں کےلیے پانچ سو مکانوں کی تعمیرروکنے کے لیے
سلامتی کونسل کے15 رکن ممالک میں سے14 نےاس قرارداد کی حمایت میں ووٹ ڈالے جبکہ امریکہ نے ووٹ ڈالنے سے انکار کر دیا۔

فلسطین کی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ سیب ارکات نے اس قرارداد کو بین الاقوامی قانون کی فتح اور اسرائیل میں شدت پسند عناصر کی شکست قرار دیا۔

دوسری جانب اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے اس قرارداد کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہےکہ اسرائیل اس قراردار کا احترام نہیں کرے گا۔

اسرائیلی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اسرائیل امریکہ کے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کے ساتھ مل کر اس قرارداد کے منفی اثرات کا مقابلہ کرنے کے لیے پرامید ہے۔

یاد رہےکہ غربِ اردن میں اسرائیل کی جانب سے تعمیر کردہ یہودی بستیاں فلسطینیوں اور اسرائیل کے درمیان ایک انتہائی متنازع موضوع ہے جسے خطے میں قیامِ امن کے لیے اہم رکاوٹ سمجھا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ1967 کی عرب اسرائیل جنگ کے بعد سے اسرائیل نے غربِ اردن اور مشرقی یروشلم میں تقریباً 140 بستیاں تعمیر کی ہیں جن میں پانچ لاکھ کے قریب یہودی باشندے رہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں