The news is by your side.

Advertisement

امریکا کا یوکرین کیلیے مزید فوجی امداد کا اعلان

امریکا نے روس سے برسرپیکار یوکرین کے لیے مزید 15 کروڑ ڈالر مالیت کے نئے فوجی امدادی پیکیج کا اعلان کردیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے مطابق صدر جو بائیڈن نے جمعے کو امدادی پیکج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ’اس کے ذریعے یوکرین کو جنگی اسلحہ اور ریڈارز کے علاوہ دیگر سازوسامان فراہم کیا جائے گا جبکہ صدر بائیڈن نے کانگریس پر بھی زور دیا کہ وہ یوکرین کے لیے مزید 33 ارب ڈالر کے امدادی پیکیج کی منظوری دے۔

صدر جو بائیڈن نے جاری بیان میں مزید کہا کہ ’امریکا نے یوکرین کو انتہائی تیز رفتاری کے ساتھ تاریخی امداد فراہم کی ہے اور ہم نے یوکرین کی آزادی کے لیے اگلی صفوں پر لڑنے والوں کو براہ راست اسلحہ اور سامان فراہم کیا ہے جس کی کانگریس نے منظوری دی ہے۔‘

تاہم امریکی صدر کا یہ بھی کہنا تھا کہ ’یوکرین کے لیے منظور شدہ فنڈز ختم ہونے کے قریب ہیں اور یوکرین کی جیت کے لیے ضروری ہے کہ امریکا اور اس کے اتحادی بغیر کسی تعطل کے اسلحہ بھجواتے رہیں۔‘

واضح رہے کہ آج یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی ورچوئل اجلاس میں شرکت کریں گے جس میں صدر بائیڈن کے علاوہ جی سیون ممالک کے سربراہان بھی شرکت کریں گے۔ اجلاس میں روس کے خلاف مغربی ممالک کی جانب سے فراہم ہونے والی امداد پر غور کیا جائے گا۔

اس حوالے سے امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بلنکن کا کہنا ہے کہ 24 فروری کو یوکرین پر روس کے حملے کے بعد سے اب تک امریکا اب تک 3 ارب 80 کروڑ ڈالر کی مالیت کے ہتھیار کیف کو دے چکا ہے جس میں اینٹی ایئر کرافٹ اسٹنگر میزائل، ڈرونز اور بھاری اسلحہ شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں