امریکی محکمہ خارجہ کی افغان طالبان کودہشتگردقراردینے سے معذرت -
The news is by your side.

Advertisement

امریکی محکمہ خارجہ کی افغان طالبان کودہشتگردقراردینے سے معذرت

واشنگٹن : امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان نے افغان طالبان کودہشت گرد قرار دینے سے معذرت کرلی۔

امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیتھر ناؤوٹ نے پریس بریفنگ کے دوران اے آروائی نیوز کے نمائندے کے سوال پر افغان طالبان کودہشتگردقراردینے سے معذرت کرلی۔

امریکی ترجمان نے جواب میں کہا کہ نئی افغان پالیسی تشکیل کے مراحل میں ہے، نئی پالیسی کا انتظارکریں، نئی افغان پالیسی سے پہلے افغانستان کے معاملات پرکوئی تبصرہ نہیں کرسکتی۔

ہیدرنوئیرٹ نے کہا کہ جموں کشمیر میں دہشت گرد حملوں پر تشویش ہے، مذہبی رسومات ادا کرنے والوں پر حملہ ناقابل قبول ہے، ہمیں نہیں معلوم کہ ان حملوں کا ذمہ دارکون ہے۔

یاد رہے اس سے قبل امریکہ نے افغانستان میں امن کو سیاسی مفاہمت سے مشروط کرتے ہوئے پاکستان پر زور دیا تھا کہ وہ اپنے ہمسایہ ملک میں امن عمل میں حصہ لینے کے لیے طالبان کو قائل کرے ۔

امریکی محکمہ خارجہ نے کہا کہ مریکہ افغانستان میں امن بحال کرنے کے لیے سیاسی حل کی جانب ہی دیکھتا ہے کیونکہ فوجی حل کے ذریعے افغانستان میں امن بحال کرنا مشکل ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ وہاں لوگ کافی عرصے سے حالت جنگ میں ہیں اور امریکہ نے افغان حکومت کی مدد جاری رکھی ہوئی ہے ۔

امریکی تھنک ٹینک میں موجود افغان ماہرین کا خیال ہے کہ افغانستان کے مسائل کے حوالے سے اپنے خیالات کو عوامی سطح پر شیئر کرنے سے امریکی پالیسی سازی کے عمل پر اثر انداز ہونے کا یہ اچھا موقع ہے ۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں