The news is by your side.

Advertisement

روسی میزائل کی خریداری، امریکا کا ترکی پر نئی پابندیاں لگانے پر غور

واشنگٹن: ترک حکام کی جانب سے روسی میزائل ایس 400 کی خریداری پر امریکا ترکی پر نئی پابندیاں عاید کرسکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی انتظامیہ نے بتایا ہے کہ اگر نیٹو کے اتحادی ترکی نے روس سے دفاعی نظام خریدا تو ایسے میں امریکا، ترکی کو ایف 35 طرز کے جدید لڑاکا پروگرام سے الگ کر دے گا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ترک صدر رجب طیب اردوگان نے یقین دہانی کرائی ہے کہ امریکا ترکی پر پابندیاں عاید نہیں کرے گا۔

امریکی دفتر خارجہ کے ترجمان نے بتایا کہ امریکا تسلسل سے یہ بات کہتا چلا آ رہا ہے کہ ترکی نے اگرایس 400 طرز کے روسی میزائل شکن دفاعی نظام خریدنے میں پیش قدمی کی تو اسے حقیقی طور پر منفی نتائج کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ان میں ایف 35 طرز کے جدید لڑاکا پروگرام کی خریداری اور صنعتی معاہدے سے علیحدگی اور امریکی قانون کے مطابق پابندیوں کا سامنا شامل ہے۔

امید ہے، امریکا روسی میزائل ڈیل کے باعث ترکی پر پابندی عائد نہیں‌ کرے گا: اردوان

امریکی عہدیداروں نے برطانوی خبررساں ایجنسی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ترکی کو ایس 400 دفاعی نظام فراہمی کے بعد فوری طور پر امریکی پابندیاں عاید کر دی جائیں گی اور انقرہ کو ایف 35 طیاروں کے پروگرام سے بھی ہاتھ دھونا پڑیں گے۔

خیال رہے کہ اپنے حالیہ بیان میں ترک صدر نے کہا تھا کہ امریکا روس کے ساتھ میزائل نظام کی ڈیل کی بنیاد پر ترکی کے خلاف کارروائی نہیں کرے گا، وہ پرامید ہیں کہ اقتصادی پابندیاں عائد نہیں کی جائیں گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں