تجارتی جنگ تھم گئی، چین اور امریکا کا نئے ٹریڈ ٹیرف عائد نہ کرنے پر اتفاق
The news is by your side.

Advertisement

تجارتی جنگ تھم گئی، چین اور امریکا کا نئے ٹریڈ ٹیرف عائد نہ کرنے پر اتفاق

بیونس آئرس: امریکا اور چین کے صدر ایک دوسرے کی مصنوعات پر عائد ٹیکسوں کی نئی شرح کو معطل کرکے معاملات کے حل کے لیے مذاکرات پر اتفاق کرلیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکا نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے چینی ہم منصب شی جن پنگ نئے تجارتی محصول پر 90 دنوں کے لیے معطل کرنے پر اتفاق کیا ہے تاکہ دونوں ممالک مذاکرات سے معاملات حل کرسکیں۔

دونوں ممالک کے صدور کے درمیان تجارتی جنگ شروع ہونے کے بعد یہ پہلی ملاقات تھی، دونوں رہنماؤں نے بیونس آئرس میں جی 20 کے سربراہ کانفرنس کے بعد ملاقات کی۔

دوسری جانب چین نے کہا ہے کہ دونوں رہنماؤں نے یکم جنوری 2019 سے کسی نئے محصول کے نہ لگانے پر رضامندی ظاہر کی ہے۔

مزید پڑھیں: جی 20 اجلاس : امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بے پروائی خبروں کی زینت بن گئی

قبل ازیں جی 20 اجلاس میں رکن ممالک کے رہنماؤں نے ایک مشترکہ اعلامیہ جاری کیا جس میں تجارت میں جاری تفرقے پر روشنی ڈالی گئی لیکن اس میں ملکی مصنوعات کے تحفظ کے معاشی نظام پر کوئی تنقید نہیں کی گئی۔

وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اس پر عمل درآمد 90 دنوں کے لیے ملتوی کردیا گیا ہے لیکن اس کے ساتھ یہ بھی کہا ہے کہ اگر اس مدت کے خاتمے کے بعد طرفین کسی معاہدے پر نہیں پہنچتے تو پھر محصول دس فیصد سے بڑھا کر 25 فیصد کردیا جائے گا۔

اس سے قبل چین کے سرکاری ٹی وی نے کہا تھا کہ یکم جنوری کے بعد سے کوئی محصول نہیں لگے گا اور دونوں ممالک کے درمیان بات چیت جاری رہے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں