کیا ہوا جب امریکیوں نے پہلی بار پرندوں کی مٹکی دیکھی -
The news is by your side.

Advertisement

کیا ہوا جب امریکیوں نے پہلی بار پرندوں کی مٹکی دیکھی

امریکہ ایک ترقی یافتہ ملک ہے اور وہاں کی آسائشیں اور اور ایجادات پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک کے شہریوں کو عموماً حیران کرتی ہیں لیکن پاکستان میں عام استعمال ہونے والی ایک معمولی سی چیز نے امریکیوں پرحیرت کے پہاڑ توڑ دیے۔

کراچی میں قائم امریکی قونصل خانہ پاکستان کے شہریوں اوریہاں کے بودوباش کو سمجھنے کے لیے مختلف نوعیت کے اقدامات کرتا رہتا ہے ‘ اسی نوعیت کا ایک تجربہ انہوں نے کیا اور امریکیوں کے سامنے پاکستان میں عام پائی جانے والی پرندوں کی مٹکی رکھ دی‘ اس ویڈیو کو انہوں نے ’’یہ کیا ہے‘‘ عنوان دیا ہے۔


ویڈیو دیکھنے کے لیے نیچے اسکرول کیجیے


پاکستان میں پرندے پالنے والے افراد اس مٹکی کے استعمال اور افادیت سے اچھی طرح واقف ہیں اور وہ لوگ جنہوں کبھی پرندے نہیں پالے وہ بھی کم از کم اس کا مصرف ضرور جانتے ہیں لیکن امریکیوں کے لیے یہ بالکل اچھوتی اور حیرت انگیز شے تھی۔

امریکیوں کا ردعمل


انہوں نے اپنی معلومات کے مطابق اس پر اپنی رائے کا اظہار کرنا شروع کیا اور مٹکی کے ایسے ایسے استعمالات بتائے جو کہ اسے بنانے والوں نے بھی کبھی نہیں سوچے ہوں گے۔

ایک صاحب کا خیال تھا کہ یہ ایک دوات ہے جس کے اندر روشنائی بھری جاتی ہوگی اور سامنے کی جانب موجود چھوٹے سوراخ سے قلم داخل کر اسے روشنائی سے سیراب کیا جاتا ہوگا۔

ایک صاحبہ کہتی ہیں کہ میں اسے سر پر رکھ کر رقص کرسکتی ہوں جبکہ ایک اور صاحب سمجھتے ہیں کہ یہ ایک ایسا برتن ہے جس میں دہی رکھا جاتا ہوگا اور چھوٹا سوراخ دہی انڈیلنے کے لیے دیا گیا ہے۔

سب سے دلچسپ تبصرے جو تھے ان میں سے ایک بزرگ امریکی خاتون کا خیال تھا کہ مٹکی کے سوراخ سے کوئی پائپ نما شے آکر منسلک ہوتی ہے اور اس کے بعد اس کا اوپری دہانہ پانی پینے کے لیے استعمال ہوتا ہوگا۔

ایک اور صاحب کا خیال تھا کہ یہ برتن بلیوں کو کھانافراہم کرنے کے لیے تیار کیا گیا ہے اوپر دہانے سے بڑی بلی کھانا کھا سکتی ہے جبکہ مٹکی کی سائیڈ میں موجود چھوٹے سوراخ سے بلی کا بچہ مستفید ہوسکتا ہے۔

اور جب انہیں بتایا گیا کہ یہ مٹکی درحقیقت پرندوں کاایک مصنوعی گھونسلا ہے تو ان پر حیرت کے پہاڑ ٹوٹ پڑے اوروہ اپنی قیاس آرائیوں پر تادیر ہنستے رہے۔ ایک خاتون کا کہنا تھا کہ وہ یہ مٹکی کل ہی اپنی بالکونی میں ںصب کریں گی تاکہ پرندے ان کے گھر میں اپنا گھونسلہ بنا سکیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں