The news is by your side.

Advertisement

کرونا کے اثرات ، عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت17سال کی کم ترین سطح پر آگئی

نیویارک : عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت17سال کی کم ترین سطح پر آگئی، امریکی خام تیل کی قیمت میں6 فیصد اور برطانوی خام تیل کی قیمت میں 3.4 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں کمی کے اثرات تیزی سے سامنے آ رہے ہیں، عالمی منڈی میںامریکی خام تیل کی قیمت سترہ سال کی کم ترین سطح پر پہنچ گئی ، امریکی خام تیل کی قیمت میں6 فیصد کمی ہوئی ، جس کے بعد امریکی خام تیل 25 ڈالر 41 سینٹ فی بیرل میں فروخت ہو رہا ہے۔

اسی طرح برطانوی خام تیل کی قیمت میں بھی 3.4 فیصدکمی ہوئی اور برطانوی خام تیل 27 ڈالر 74 سینٹ فی بیرل میں فروخت ہونے لگا۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق ایک ہی دن میں امریکی خام تیل کی فی بیرل قیمت 25.68ڈالرزفی بیرل تک گری جو کہ مئی 2003 کے بعد سے اب تک کی کم ترین سطح ہے۔

دوسری جانب ایشیائی مارکیٹس میں خام تیل کی قیمت میں کمی کارجحان برقرارہے، عرب لائٹ کی قیمت تیس ڈالر ترسیٹھ سینٹ فی بیرل ہوگئی ، سعودی عرب کی جانب سےخام تیل کی برآمدات میں اضافےاور کرونا کے باعث معاشی سست روی خام تیل کی قیمتوں میں کمی کاباعث بن رہی ہے۔

یاد رہے گزشتہ ہفتے عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں 29 سال کی ریکارڈ کمی ہوئی تھی اور امریکی خام تیل کی قیمت 30 فیصد کمی کے بعد 29 ڈالر 88 سینٹ فی بیرل پر آگئی تھی۔

عالمی منڈی میں خام تیل کی یہ قیمتیں 1991 کی خلیجی جنگ کے بعد 29 سال کی کم ترین سطح پر آئی تھیں۔

خیال رہے معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ خام تیل کی قیمتوں میں کمی کے بعد پاکستان کےدرآمدی بل میں نمایاں کمی متوقع ہے، جس سے پاکستان کو سالانہ پانچ ارب ڈالر تک کی بچت ہوسکتی ہے۔

ماہرین کے مطابق پاکستان اپنا 80 فی صد تیل غیر ملکی ذرایع سے درآمد کرتا ہے، اس سے پاکستان کے درآمدی بل میں نمایاں کمی متوقع ہے، جس سے پاکستان کو سالانہ پانچ ارب ڈالر تک کی بچت ہوسکتی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں