The news is by your side.

Advertisement

امریکا نے تحریک آزادی کشمیر اور ملی مسلم لیگ کو دہشت گرد قرار دے دیا

واشنگٹن: امریکا بھی بھارت کی زبان بولنے لگا اور تحریک آزاد کشمیر اور ملی مسلم لیگ کی یکسر مخالفت کرتے ہوئے اسے دہشت گرد تنظیم قرار دے دیا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے واضح کیا کہ تحریک آزاد کشمیر اور ملی مسلم لیگ لشکر طیبہ کا ہی دوسرا نام ہیں اور اس طرح کی کوئی بھی تنظیم ہم سے چھپی نہیں رہ سکتی ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ نے دونوں تنظیموں کا نام دہشت گردوں کی لسٹ میں ڈال دیا ہے، اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے ترجمان ہیدر نوئرٹ کا کہنا ہے کہ لشکر طیبہ اور ملی مسلم لیگ ایک ہی گروپ کے دو نام ہے اور اس طرح کی کسی بھی تنظیم کی حمایت نہیں کرسکتے۔

دوسری جانب امریکا نے ملی مسلم لیگ کی قیادت کے 7 ارکان کے نام بھی دہشت گردوں کی لسٹ میں شامل کرلیے ہیں، جن کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ وہ لشکر طیبہ کے لیے کام کررہے ہیں۔

ان افراد میں سیف اللہ خالد، مزمل اقبال ہاشمی، محمد حارث، تابش قیوم، فیاض احمد، فیصل ندیم اور محمد احسان شامل ہیں۔

رواں برس جنوری میں بھی امریکا نے دہشت گردوں کی معاونت کے الزام میں تین پاکستانی شہریوں حیات اللہ، علی محمد ابو تراب، عنایت الرحمان اور ایک تنظیم جماعت الدعوۃ القرآن کی ویلفیئر ڈیولپمنٹ آرگنائزیشن پر پابندی عائد کی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں