The news is by your side.

Advertisement

چین: پراسرار بیماری میں مبتلا امریکی سفارتی عملہ خوف کا شکار، طبی جانچ شروع

بیجنگ: امریکا نے چین میں تعینات اپنے سفارتی عملے کو پراسرار بیماری میں مبتلا ہونے کے اندیشے کے باعث وطن واپس بلوانا شروع کر دیا.

تفصیلات کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے چین سے اپنے مزید ارکان کو واپس بلایا ہے. امریکی حکام کو خدشہ ہے کہ چین میں‌ امریکی اہل کار اُسی پراسرار بیماری کی لپیٹ میں‌ آسکتے ہیں، جس کا سامنا کیوبا میں تعینات عملے کو کرنا پڑا تھا. اس مرض میں انسان کو کانوں میں پراسرار آوازیں سنائی دینے لگتے ہیں.

چین کے جنوبی شہر گوانگ ژو میں سامنے آیا، جس بعد امریکی عملے کو وہاں سے ہٹا کر امریکی طبی ماہرین کو ایک ٹیم کو گوانگ ژو روانہ کیا گیا ہے

یہ کیس چین کے جنوبی شہر گوانگ ژو میں سامنے آیا، جس بعد امریکی عملے کو وہاں سے ہٹا کر امریکی طبی ماہرین کی ایک ٹیم کو گوانگ ژو روانہ کیا گیا ہے.

اس ضمن میں امریکی محکمہ خارجہ نے ایک خصوصی بیان جاری کیا، جس کے مطابق متاثرہ افراد کی امریکا میں تفصیلی جانچ ہوگی۔

یاد رہے کہ امریکی حکام کی جانب سے کیوبا میں اپنے عملے پر صوتی حملے کا الزام عائد کیا تھا۔ اب خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ چین میں‌ بھی اسی نوعیت کا حملہ ہوا ہے، جو انسان دماغ کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

گذشتہ برس کیوبا میں تعینات 24 امریکی اہلکار اور ان کے اہل خانہ ان حملوں کی زد میں آئے تھے، جس کے بعد ان میں برین ٹراما جیسی علامات ظاہر ہوئیں، اب ایسی ہی علامت گوانگ ژو میں بھی دیکھی گئی ہیں.


پراسرار صوتی حملہ: کینیڈا نے کیوبا سے سفیروں کے خاندان واپس بلالیے


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں