The news is by your side.

Advertisement

امریکا نے بگرام ایئربیس خالی کردیا

کابل: افغانستان میں سب سے بڑا امریکی فضائی اڈہ ‘بگرام ائیربیس’ خالی کردیا گیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق 20سال بعد امریکا نے بگرام ائیربیس خالی کرکے افغانستان کے حوالے کردیا، امریکی اور نیٹو فورسز نے بگرام ائیربیس سے انخلا کا عمل آج مکمل کیا۔

امریکی دفاعی حکام نے بھی تصدیق کی ہے کہ امریکی فورسز کے دستے نے بگرام ائیربیس آج خالی کردیا ہے۔

A Growing U.S. Base Made This Afghan Town. Now It's Dying. - The New York  Times

The Demolition of Bagram Air Field

بگرام کا فوجی اڈہ طالبان اور القاعدہ کے خلاف جنگ میں امریکا کا اہم مرکز سمجھا جاتا تھا۔ بگرام ایئربیس 2 دہائیوں تک افغانستان میں امریکی کارروائیوں کے لیے استعمال ہوتا رہا ہے۔

خیال رہے کہ 1950 کی دہائی میں سرد جنگ کے دوران امریکا نے اپنے اتحادی ملک افغانستان کے لیے بگرام ہوائی اڈے کو تعمیر کیا تھا۔ اس اقدام کا مقصد شمال میں سابق سوویت یونین کو روکنا تھا۔

امریکا کا بگرام ایئر بیس سے متعلق اہم اعلان

اس کے برعکس یہ 1979 میں افغانستان میں سوویت یونین کے پڑاؤ کا مقام بن گیا اور سرخ فوج نے افغانستان پر تقریباً 10 سال تک جاری رہنے والے قبضے کے دوران اس میں نمایاں توسیع کی۔ بعد ازاں امریکا کے ہاتھوں سوویت یونین کی شکست کے بعد یہ دوبارہ امریکا کے حصے میں آیا۔

تاہم اب اسے خالی کرکے افغان فورسز کے حوالے کردیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں