The news is by your side.

Advertisement

امریکا کی غیر متعلقہ امور پر گفتگو سے بداعتمادی کی فضا میں اضافہ ہوگا: ایران

تہران: ایران نے امریکا کی جوہری معاہدے سے ہٹ کر غیر متعلقہ امور پر گفتگو کو بداعتمادی کی فضا میں اضافے کی وجہ قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق ایران نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے سے ہٹ کر غیر متعلقہ امور کی بات کرنا اس معاہدے کے لیے فائدہ مند نہیں بلکہ اس سے فریقین کے درمیان بد اعتمادی کی فضا میں اضافہ ہوگا۔

میڈیارپورٹس کے مطابق ایران کے دفترخارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے فرانسیسی صدر کے حالیہ بیان پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے امریکی صدر کی جانب سے فرانسیسی صدر کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران ایران کے خلاف کئے گئے دعووں کو مسترد کردیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ڈونلڈ ٹرمپ کے ایران مخالف پرانے دعوے کا جواب دینا ضروری نہیں سمجھتے۔ موسوی کا کہنا تھا کہ جوہری معاہدے سے امریکا کی یکطرفہ علیحدگی کے بعد یورپی فریق نے سیاسی بیانات کے علاوہ اب تک کوئی عملی اقدامات نہیں اٹھائے جن سے ایران کو اس معاہدے کے ثمرات مل سکیں۔

انہوں نے یہ تجویز دی کہ جوہری معاہدے سے ہٹ کر غیرمتعلقہ امور پر بات کرنے سے کچھ حاصل نہیں ہوگا بلکہ ایسے بیانات سے امریکا کو اپنے یکطرفہ اقدامات کو جواز دینے کے لئے فائدہ حاصل ہوگا۔

جنگ اور بات چیت کا کوئی باہمی میل نہیں، ایران کا امریکا کو جواب

قبل ازیں ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے کہا تھا کہ جنگ اور بات چیت کا کوئی باہمی میل نہیں، امریکی پابندیاں درحقیقت ایران کے اخلاف اقتصادی دہشت گردی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں