The news is by your side.

Advertisement

امریکی محکمہ انصاف نے ٹرمپ کے سابق مشیر کے حق میں فیصلہ سنا دیا

واشنگٹن: امریکی محکمہ انصاف نے وائٹ ہاؤس کو گمراہ اور ایف بی آئی سے تفتیش کے دوران جھوٹ بولنے والے مائیکل فلن کےحق میں فیصلہ سنادیا اور مائیکل فلن کیخلاف فوجداری مقدمات ختم کر دیئے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی محکمہ انصاف نے وائٹ ہاؤس کو گمراہ اور ایف بی آئی سے تفتیش کے دوران جھوٹ بولنے کا اعتراف کرنے والے سابق نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر مائیکل فلن کیخلاف فوجداری مقدمات ختم کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

امریکی صدرڈونلڈٹرمپ نے محکمہ انصاف کےفیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ مائیکل فلن کیخلاف اوباماانتظامیہ نےسازش کی تھی، اس معاملے پر بہت سے افراد کو بھاری قیمت اداکرناپڑے گی۔

ڈونلڈٹرمپ کا کہنا تھا کہ مائیکل فلن کوامریکی صدرکیخلاف استعمال کرنےکی کوشش کی گئی، اوباما،محکمہ انصاف کی سابق انتظامیہ کی بددیانتی پکڑی گئی، مجھےجنرل مائیکل فلن پرفخرہے۔

خیال رہے مائیکل فلن صدرٹرمپ کےقریبی ساتھی اورقومی سلامتی کےمشیررہ چکےہیں، ان پر3سال قبل وائٹ ہاؤس کوگمراہ کرنےکےالزامات عائد کیے گئے تھے جبکہ مائیکل فلن نےتفتیش کےدوران ایف بی آئی سےجھوٹ بولنےکااعتراف کیا تھا۔

یاد رہے امریکی سینیٹ اور کانگریس نے مائیکل فلن پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے امریکی پابندیوں کے بارے میں روسی حکام سے بات چیت کی۔

یاد رہے کہ نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخاب سے قبل ماہ اکتوبر میں امریکی حکومت نے روس پر ڈیموکریٹک پارٹی پر سائبر حملوں کا الزام عائد کیا تھا۔

مریکی انٹیلیجنس ایجنسیوں نے جنوری میں کہا تھا کہ روس نے صدرڈونلڈ ٹرمپ کوانتخاب میں کامیابی دلانے کے لئے صدارتی انتخاب میں مداخلت کی، روس نے ڈیموکریٹک صدارتی امیدوارہیلری کلنٹن کی انتخابی مہم ہیک کی اوران کی ای میلز جاری کیں تاکہ ہیلری کلنٹن کی انتخابی مہم کونقصان پہنچایا جا سکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں