The news is by your side.

Advertisement

امریکا نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی واچ لسٹ میں ڈال دیا

واشنگٹن : امریکا نے پاکستان کومذہبی آزادی کی واچ لسٹ میں ڈال دیا جبکہ بھارت میں مذہبی آزادی کی ابتر صورتحال پر صرف تشویش کا اظہار کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ نے پاکستان کو مذہبی آزادی کی واچ لسٹ میں شامل کردیا، مذہبی آزادی پر امریکا کے خصوصی سفیر سیموئل برون بیک نے اس بات کا اعلان واشنگٹن میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔

بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں نسل کشی کی کوشش اور اقلیتی مذاہب اور ذاتوں پر حملوں کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

امریکہ کے خصوصی سفیر سیموئیل برون بیک نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا بھارت میں بھی مختلف مذاہب کو آزادی حاصل نہیں تاہم امریکا بھارت کو واچ لسٹ میں نہیں ڈال رہا۔

سیموئل برون بیک کا کہنا تھا کہ جولائی میں مذہبی آزادی پر واشنگٹن میں پہلی مرتبہ وزرا کی سطح کی کانفرنس ہوگئی، کانفرنس میں ہم خیال حکومتوں، عالمی تنظیموں، مذہبی طبقات، سول سوسائٹی کے افراد کو مدعو کیا جائے گا۔

دوسری جانب عالمی مذہبی آزادی رپورٹ 2017 جاری کردی گئی، وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا مذہبی آزادی کا امریکہ کے آغاز میں کردار تھا اور یہ رپورٹ دنیا بھر میں مذہبی آزادی کی حمایت میں امریکی تاریخی کردار کا ایک بیان ہے۔

مائیک پومپیو کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ اور نائب صدر مذہبی آزادی کے خواہاں افراد کے ساتھ ہیں۔ ہم دنیا بھر مذہبی آزادی کی حمایت کرنے کیلئے پر عزم ہیں۔

انھوں نے مزید کہا یہ رپورٹ 200 ملکوں میں حکومتوں، دہشت گرد گروپوں اور انفرادی شخصیات کی جانب سے مذہبی آزادی کو پامال کرنے اور اس مسئلے کے حل کا احاطہ کرتی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں