The news is by your side.

Advertisement

ایران کے جوہری معاہدے کی حمایت پر صدر اوباما متحرک

واشنگٹن : ایران جوہری معاہدے پر امریکی کانگریس میں رواں ماہ ووٹنگ ہونے والی ہے جبکہ صدر اوباما نے ایران معاہدے کی امریکی سینٹ سے توثیق کیلئے مطلوبہ تعداد میں سینیٹرز کی حمایت حاصل کر نے کیلئے کوششیں تیز کر دی ہیں۔

        تاریخی ایران جوہری معاہدے پر امریکی کانگریس میں رواں ماہ ووٹنگ ہونے والی ہے اور ممکنہ طور پر کانگریس اس معاہدے کی مخالفت کرسکتی ہے لیکن میڈیا رپورٹس کے مطابق صدر اوباما کے پاس اب اتنے ووٹ ہیں کہ وہ نا منظوری کی کسی قرارداد کو ناکام بنا سکتے ہیں۔

صدر اوباما کے مطابق یہ معاہدہ ایران کو جوہری ہتھیار بنانے سے باز رکھے گا، حزب مخالف کی جماعت ری پبلکن پارٹی اس معاہدے کے خلاف متحد ہے اور اس کا کہنا ہے کہ یہ معاہدہ صرف ایران کو شہ دے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق صدر اوباما نے ایران معاہدے کی امریکی سینٹ سے توثیق کیلئے 34 سینیٹرز کی حمایت حاصل کرلی ہے اور وائٹ ہاؤس کو امید ہے کہ وہ مزید سات سینیٹرز کی حمایت حاصل کرنے میں کامیاب رہے گا تاکہ فے لے بسٹر نامی قانونی حق استعمال کیا جاسکے۔

اس قانون کے تحت ایران ڈیل پر حتمی ووٹنگ کی ضرورت ہی نہیں پڑے گی اور نہ ہی صدر اوباما کو ایران سے کئے گئے معاہدے کو یقینی بنانے کیلئے ویٹو کا حق استعمال کرنا پڑے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں