The news is by your side.

Advertisement

شٹ ڈاؤن طویل مدتی حل نہیں، جلد معمول کی صورتحال پر واپس آجائیں گے، ٹرمپ

واشنگٹن : امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نےکہاہےکہ شٹ ڈاؤن طویل مدتی حل نہیں ،معیشت کومستقل چلاناضروری ہے،جلدمعمول کی صورتحال پروا پس آجائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کی کوروناٹاسک فورس کےہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ قوم نظرنہ آنیوالےدشمن کےساتھ لڑرہی ہے کورونا وائرس نےقیمتی امریکیوں کی جان لی۔

ٹرمپ نے جاں بحق ہونےوالوں کےلواحقین سےتعزیت کرتے ہوئے کہا کہ کوروناویکسین کی تیاری کاعمل جاری ہے، امریکی ڈاکٹرز، نرسنگ اسٹاف کاایسا ہیروازم پہلےنہیں دیکھا، ہماری حکمت عملی کے باعث ہزروں جانیں محفوظ ہوئیں، کسی کووینٹی لیٹر کیلئے منع نہیں کیا،ہزاروں وینٹی لیٹرزتیارہورہے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ امریکادوبارہ کھولنےجارہےہیں،شٹ ڈاؤن طویل مدتی حل نہیں، 850 کاؤنٹیز میں گزشتہ ہفتے سے کوئی نیا کورونا کیس نہیں آیا، تمام گورنرریاستوں کومحفوظ طریقوں سےکھولناچاہتےہیں، جلدمعمول کی صورتحال پرواپس آجائیں گے، کیونکہ معیشت کو مستقل چلاناضروری ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ کچھ ریاستیں فیزون پرکل سےعمل شروع کردینگی، کوئی بھی مستقل بندش نہیں چاہتا، سائنسدانوں، ریسرچرز کی مدد سے نئی گائیڈ لائنز متعارف کرائیں گے اور امریکاکو3مرحلوں میں کھولیں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ معمررسیدہ افرادکی خصوصی دیکھ بھال جاری رکھیں گے، صحتمند شہری نئی گائیڈلائنزکےساتھ کاموں پرواپس آئیں گے.

امریکی صدر نے کہا کہ مجھےاپنی الیکشن مہم کی نہیں ملک کی فکر ہے، نہ نظرآنےوالادشمن زیادہ خطرناک ہوتاہے، کسی گورنر کو کاروبار کھولنےکیلئےمجبورنہیں کریں گے ، ڈیموکریٹس،ریپبلکن گورنرزبہترین خدمات انجام دےرہےہیں، ہم نےموجودہ وقت سےبہت کچھ سیکھاہے۔

خیال رہے امریکا میں کورونا وائرس 34 ہزار 641 افراد کی زندگیاں نگل گیا اور متاثرین کی تعداد 6 لاکھ 78 ہزار سے زائد ہوگئی ہے جبکہ نیویارک میں وائرس سے 16 ہزارافراد جان سےچلےگئے اور2 لاکھ 26 ہزارسےزیادہ افراد متاثرہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں