The news is by your side.

Advertisement

امریکا نے اہم کرونا ویکسین کا استعمال روکنے کی سفارش کر دی

واشنگٹن: امریکی وفاقی صحت اداروں نے جانسن اینڈ جانسن کمپنی کی تیار کردہ کو وِڈ ویکسین کا استعمال روکنے کی سفارش کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی فیڈرل ہیلتھ ایجنسیوں نے جے اینڈ جے کی ون ڈوز کرونا ویکسین کا استعمال روکنے کی سفارش کر دی ہے، اس ویکسین کے استعمال سے 6 افراد میں خون جمنے ( بلڈ کلاٹنگ) کی شکایت موصول ہوئی تھی۔

خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے مطابق مذکورہ افراد کو 2 ہفتے قبل جے اینڈ جے کی سنگل ڈوز ویکسین دی گئی تھی، ان افراد کی عمریں 18 سے 48 کے درمیان تھیں، اور یہ سب خواتین تھیں، ان میں ویکسین لگانے کے 13 دن بعد خون جمنے، بلڈ پریشر اور پلیٹ لیٹس کم ہونے کی علامات ظاہر ہوئیں۔

یاد رہے کہ یورپی ممالک نے بلڈ کلاٹنگ کی شکایت کی وجہ سے چند روز قبل آسٹرا زینیکا کی کو وِڈ 19 ویکسین کے استعمال پر پابندی لگائی تھی، آسٹرا زینیکا ویکسین سے خون کے جمنے کی وجہ سے اموات بھی واقع ہوئی تھیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق دیگر کمپنیوں کی ویکسینز کے مقابلے میں لوگ جے اینڈ جے کی واحد خوراک ویکسین کو ترجیح دیتے ہیں، آسٹرا زینیکا کی کم لاگت والی ویکسین کو بھی وبائی امراض کے خلاف جنگ میں ایک اہم دوا کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔

امریکی ادارہ برائے صحت اور وبائی امراض (سی ڈی سی) کی مشاورتی کمیٹی بدھ کے روز جانسن اینڈ جانسن کی ویکسین سے متعلق معاملات کا جائزہ لے گی، جس میں امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن (ایف ڈی اے) کے ماہرین بھی شامل ہوں گے۔

اس اہم میٹنگ میں جے اینڈ جے کی کرونا ویکسین کے استعمال پر عارضی پابندی سے متعلق حتمی فیصلہ بدھ کے روز کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں