The news is by your side.

Advertisement

امریکا: کرونا سے ہلاک افراد کی تدفین کے لیے جگہ کم پڑگئی، اجتماعی قبروں کی تیاری

واشنگٹن: امریکی ریاست نیویارک میں کروناوائرس سے ہلاک ہونے والے افراد کی تدفین کے لیے قبرستان میں جگہ کم پڑگئی، ٹرمپ انتظامیہ کے لیے وبائی مرض بڑا چیلنج بن گیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق امریکا میں کروناوائرس سے ہزاروں افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ جبکہ مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والے افراد کی تدفین کے لیے ریاست کے تمام قبرستانوں میں جگہ کم پڑ چکی ہے۔

البتہ نیویارک کے ہارٹ نامی جزیرے پر اجتماعی قبر کھود کر میتوں کو دفنایا جا رہا ہے۔ متعلقہ اداروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ وبائی مرض سے مزید افراد کی ہلاکتیں ممکن ہیں جس کے پیش نظر اسی طرح مزید اجتماعی قبریں کھودی جاسکتی ہیں۔ حکومت نے وائرس پر قابو پانے کے لیے حکومت عملی تیز کردی۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے معمول کی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے سلسلے میں اب تک امریکا میں 2 کروڑ ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں، امریکی افواج 12 عارضی اسپتال بنا رہی ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے کرونا ٹاسک فورس کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا کہ لاکھوں امریکی اس مشکل وقت میں قربانیاں دے رہے ہیں، ایک بہترین مستقبل امریکیوں کی راہ دیکھ رہا ہے، مجھے محسوس ہوتا ہے ہماری معیشت جلد بہتر ہوگی، ہم بھرپور طریقے سے واپس آئیں گے، مزید 500 ملین ماسک خرید رہے ہیں، اربوں ڈالرز کی میڈیکل سپلائی ریاستوں کو بھجوا رہے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں