The news is by your side.

Advertisement

امریکا کا ایف سولہ سے متعلق معلومات بھارت کو دینے سے صاف انکار

اسلام آباد : عالمی سطح پر بھارت کو ایک بار پھر ذلت اوررسوائی کا سامنا کرنا پڑا ، امریکا نے ایف سولہ سے متعلق معلومات بھارت سے شئیرکرنے سے صاف انکارکردیا اور کہاایف سولہ طیارے پاکستان اورامریکا کا باہمی معاملہ ہے۔

بھارتی میڈیا کے بھارت نے ستائیس فروری کوپاکستان کی جانب بھارتی جنگی طیارہ مگ ٹوئنٹی ون گرائے جانے کے بعدامریکا سے ایف سولہ طیارے سے متعلق معلومات شئیرکرنے کی درخواست کی تھی۔

امریکی حکام نے بھارت کی درخواست مستردکردی اور کہا ایف سولہ طیارے پاکستان اورامریکا کا باہمی معاملہ ہے۔

یاد رہے اس سے قبل امریکی میگزین نے پاکستان کے تمام ایف سولہ طیارے گرانے کا بھارتی دعویٰ جھوٹا قرار دیتے ہوئے طیارہ موجود ہونے کی تصدیق کی تھی ۔

مزید پڑھیں : امریکی جریدے نے پاکستانی ایف 16طیارہ گرانے کا بھارتی دعویٰ جھوٹا قرار دے دیا

امریکی میگزین کا کہنا تھا پاکستان کی دعوت پر امریکی حکام نے پاکستانی ایف سولہ طیاروں کی گنتی کی اور تمام طیارے موجود تھے، کوئی بھی پاکستانی ایف سولہ طیارہ غائب نہیں تھا، بھارتی حکومت نے عالمی برادری کےسامنے غلط بیانی کی۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ پاکستان پرایف سولہ طیاروں کے استعمال سے متعلق کوئی پابندی نہیں ہے۔

واضح رہے 27 فروری کو پاکستانی شاہینوں نے دو بھارتی مگ 21 طیارے مار گرائے تھے اور بھارتی پائلٹ کو بھی گرفتار کرلیا تھا، بعد ازاں جذبہ خیر سگالی کے تحت گرفتار پائلٹ کو بھارت کے حوالے کر دیا تھا۔

جس کے بعد مودی سرکار، بھارتی فوج اور بھارتی میڈیا ڈھٹائی سے لائن آف کنٹرول پر پاکستانی ایف سولہ طیارہ مار گرانے کا دعویٰ کرتے رہے تھے۔

بھارت نےڈی جی آئی ایس پی آر میجرجنرل آصف غفور نے بھی ایف 16طیارہ گرانے کا بھارتی دعویٰ مسترد کرتے ہوئے کہا تھا بھارتی طیارے گرانے کی کارروائی میں جے ایف17 تھنڈراستعمال کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں