پاکستان اورامریکا کے تعلقات مستقبل میں کیسے ہوں گے، پیش گوئی نہیں کی جاسکتی، امریکہ
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان اورامریکا کے تعلقات مستقبل میں کیسے ہوں گے، پیش گوئی نہیں کی جاسکتی، امریکہ

واشنگٹن : امریکا نے کہا ہے کہ پاکستان اورامریکا کے تعلقات کے مستقبل پرکوئی پیش گوئی نہیں کی جاسکتی۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان محکمہ خارجہ ہیدرنوئرٹ نے میڈیا بریفنگ میں کہا پاکستان اورامریکا کے تعلقات مستقبل میں کیسے ہوں گے اس بارے میں پیش گوئی نہیں کی جاسکتی۔

امریکی وزیرخارجہ ٹلرسن کے دورہ پاکستان سے متعلق سوال پرترجمان کا کہنا تھا اس بارے میں وزیرخارجہ بیان دے چکے ہیں، محکمہ خارجہ کی ترجمان نے وزیرخارجہ ٹلرسن کی افغانستان میں بگرام کے بجائے کابل میں ملاقاتوں کی اطلاع کو کچھ اہلکاروں کی غلطی قرار دیا۔

صحافی نے ترجمان سےسوال کیا کہ وزیر خارجہ پہلے سعودی عرب کیوں گئے، جس پر ہیدرنوئرٹ نے کہا مکہ وہ پائلٹ نہیں اور نہ ہی سیکورٹی ٹیم کا حصہ ہیں ۔

امریکی ترجمان کاکہنا تھا افغانستان میں شدید سیکورٹی خدشات موجود ہیں، دورے کا شیڈول سیکیورٹی خدشات مدنظر رکھ کرتشکیل دیاجاتاہے۔


مزید پڑھیں : پاکستان سے تعلقات کو اہمیت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، امریکی وزیرخارجہ


یاد رہے کہ گذشتہ روز امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن پاکستان پہنچے تھے ، جہاں وزیر اعظم ہاؤس میں شاہد خاقان عباسی سے امریکی وزیر خارجہ نے دو بدو ملاقات کی، ملاقات میں آرمی چیف،ڈی جی آئی ایس آئی بھی شریک تھے جبکہ وزیردفاع خرم دستگیر، وزیرخارجہ خواجہ آصف وزیرداخلہ احسن اقبال اورسیکریٹری خارجہ بھی موجود تھے۔

امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹیلرسن نے کہا ہے کہ پاکستان سے تعلقات کو اہمیت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، دہشت گردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیاں قابل قدر ہیں، امریکا پاکستان سےمعیشت سمیت دیگرشعبوں میں تعاون کافروغ چاہتا ہے۔

ملاقات میں پاکستان اور امریکی وفود کے درمیان دہشت گردی کے خلاف جنگ سے متعلق امور پرتبادلہ خیال کیا گیا جبکہ پاک امریکا تعلقات، افغانستان اورخطےکی صورتحال پرگفتگو کی گئی۔

بعد ازاں امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن بھارت روانہ ہوگئے۔


مزید پڑھیں : پاکستان اور پاکستانی رہنماؤں سے بہترتعلقات کاآغازکررہے ہیں، امریکی صدر


خیال رہے کہ  امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ پاکستان سے تعلقات بہترہورہے ہیں، پاکستان اور پاکستانی رہنماؤں سےبہترتعلقات کاآغازکررہےہیں، کئی محاذوں پر پاکستانی رہنماؤں کے تعاون پرشکرگزارہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں