site
stats
عالمی خبریں

امریکی ریاستوں کا شامی مہاجرین کوپناہ دینے سے انکار

امریکی ریاست الابامہ کے گورنر رابرٹ بنٹلے نے فرانس میں ہونے والے دہشت گردوں حملوں سے خوفزدہ ہوکرامریکی ریاستوں میں شامی مہاجرین کی آمدپرپابندی پرغور شروع کردیا ہے۔

پیرس میں گزشتہ جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب ہونے والے دھماکوں میں 132 افرد جاں بحق اور 300 سے زائد زخمی ہوئے تھے ، ابتدائی تحقیقاتی رپورٹس کے مطابق حملہ آور شامی مہاجرین کے روپ میں فرانس میں داخل ہوئے۔

گورنر بنٹلے کا کہنا تھا کہ وہ کسی بھی ایسی پالیسی کی حمایت نہیں کریں گے جس سے الابامہ کے شہریوں کی سیکیورٹی کو خطرات لاحق ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی شامی پناہ گزین کو الابامہ میں پناہ نہیں دی جائے گی اور اس سلسلے میں انہوں نے وفاقی حکومت سے بات کرنے کی تیاری کرلی ہے۔

الابامہ کے گورنراس معاملے میں اکیلے نہیں ہیں بلکہ امریکہ کی ایک اور ریاست مشی گن کے گورنر رک سنائڈر نے بھی اسی قسم کے اندیشوں کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی شامی پناہ گزین کومکمل اسکریننگ سے قبل مشی گن میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ مشی گن کی امیگرینٹس کو خوش آمدید کہنے کی طویل تاریخ ہے اور ہمیں اس پر فخر ہے لیکن ہماری پہلی ترجیح ہمارے شہریوں کی حفاظت ہے۔

اس سے قبل ڈپٹی نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر کا کہنا تجا کہ امریکہ 10 ہزارشامی مہاجرین کو پناہ دینے کی پالیسی پر عمل درآمد کرے گا۔

ان کاکہنا تھا امریکہ کے پاس دنیا میں سب سے مہنگا اسکریننگ سسٹم ہے جس کی مدد سے شامی پناہ گزینوں کو جانچ کے عمل سے گزارنے کے بعد ہی امریکہ میں داخلہ دیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top